The news is by your side.

Advertisement

کرونا کی دوسری لہرمیں شدت، وزیراعظم نے مکمل لاک ڈاؤن کا عندیہ دے دیا

اسلام آباد: وزیراعظم پاکستان عمران خان نے کرونا کی دوسری لہر اور بڑھتے ہوئے کیسز کو دیکھتے ہوئے ملک بھر میں لاک ڈاؤن کا اشار ہ دے دیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ’کرونا کے کیسز اگر اسی تعداد کے ساتھ بڑھتے رہے تو حکومت لاک ڈاؤن پر مجبور ہوجائے گی اور ہمیں یہ قدم اٹھانا پڑے گا‘۔

پی ڈی ایم کے جلسے پر اُن کا کہنا تھا کہ لاکھوں کا جلسےکرلیں مگر ملک اور قوم کو نقصان پہنچانے والوں کو پھر بھی کوئی این آر او نہیں دیا جائے گا۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’این آر او کے لیے بے تاب اپوزیشن اب عوام کی جان اور روزگار تباہ کرنے پر تل گئی ہے کیونکہ وہ چاہتے ہیں کہ کسی بھی قیمت پر انہیں عام معافی دی جائے‘۔

مزید پڑھیں: پاکستان ڈیموکریٹک موؤمنٹ نے ایس او پیز کی دھجیاں اڑا دیں

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ’ملکی معیشت مضبوط ہوناشروع ہوگئی ہے،کرونا کی دوسری لہر میں مسلسل شدت آتی جارہی ہے جس سے کیسز اور اموات میں اضافہ ہورہا ہے، وینٹی لیٹر پر مریضوں کو منتقل کرنے کی تعداد بھی بڑھ گئی ہے‘

عمران خان کا کہنا تھا کہ ’ہماری معیشت نے مضبوطی اور بحالی کے اشارے دینا شروع کردیے ہیں، ایسا کوئی قدم اٹھانا نہیں چاہتے جس سے معیشت کو نقصان ہو، میں لاک ڈاؤن نہیں چاہتا تاہم اگر یہی صورت حال رہی تو مجبوری میں ہمیں بھی قدم اٹھانا پڑ سکتا ہے اور اس کی ذمہ دار پی ڈی ایم ہوگی‘۔

Comments

یہ بھی پڑھیں