site
stats
اہم ترین

کراچی: عمران خان کا اے آر وائی نیوز کے دفتر کا دورہ

کراچی: عمران خان نے صدر زینب مارکیٹ میں واقع اے آر وائی نیوز کے دفتر کا دورہ کیا۔ انہوں نے 22 اگست کو اے آر وائی نیوز کے دفتر پر ہونے والے حملہ کی سخت مذمت کی۔ دورے کے دوران انہوں نے دفتر کے عملہ سے ملاقات بھی کی۔

تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کراچی پہنچے ہیں جہاں آج شام وہ نشتر پارک میں ’پاکستان زندہ باد‘ جلسہ سے خطاب کریں گے۔

آج صبح عمران خان نے ضلع ساؤتھ کے چیئرمین منصور شیخ کی رہائش گاہ پر پرتکلف ناشتہ کیا۔ ناشتے کی تیاری کے لیے ماہر خانساماں کو خصوصی طور پر لاڑکانہ سے بلایا گیا۔ ناشتہ کے بعد عمران خان پارٹی رہنماؤں کے ساتھ ملاقات کریں گے جس کے بعد ایدھی ہوم کلفٹن کا دورہ اور لیجنڈ کرکٹر حنیف محمد کے گھر تعزیت کے لیے بھی جائیں گے۔

دوسری جانب عمران خان نے سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ ن نے 6 بار پنجاب پر حکومت کی، لیکن کیوں وہ پولیس کو سیاسی مداخلت سے آزاد کرنے اور میرٹ پر چلانے میں ناکام رہی، کیا پولیس مسلم لیگ ن کے عسکری ونگ میں تبدیل ہوچکی ہے؟

اس موقع پر باتھ آئی لینڈ میں عمران خان کی آمد کے وقت کارکنوں میں شدید بدنظمی دیکھی گئی۔ سیکیورٹی اہلکاروں نے عارف علوی اور علی زیدی سمیت متعدد رہنماؤں کو اندر جانے سے روک دیا۔

بعد ازاں عمران خان اے آر وائی نیوز کے دفتر پہنچے جہاں انہوں نے چیئرمین اے آر وائی گروپ جان محمد، گروپ ڈائریکٹر اے آر وائی ڈیجیٹل نیٹ ورک  محبوب عبدالرؤف، بیورو چیف ایس ایم شکیل اور دیگر عملہ سے ملاقات کی۔ عمران خان کے ساتھ جہانگیر ترین، علی زیدی، عمران اسمعٰیل اور تحریک انصاف کے دیگر رہنما بھی موجود تھے۔

imran-post-1

imran-post-2

imran-post-3

imran-post-4

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان میں جمہوریت کو آگے بڑھانے میں سب سے بڑا ہاتھ میڈیا کا ہاتھ ہے۔ میڈیا تحریک انصاف کے ساتھ بھی کھڑا ہوا، اگر یہ ہمیں کوریج نہ دیتا تو تحریک انصاف کے لیے حالات آج ایسے نہ ہوتے۔

انہوں نے کہا کہ آزادی صحافت کو روکنے کے 2 طریقہ ہیں۔ یا تو اسے خریدا جائے یا اس پر حملے کروائے جائیں۔ نواز حکومت میڈیا کو خریدنے کی عادی ہے تاکہ اس کی چوریاں اور ڈاکے عوام سے چھپے رہیں۔

انہوں نے اے آر وائی نیوز کے دفتر پر حملہ کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا کہ میرا قائد ایم کیو ایم کو پیغام ہے کہ ظلم و دہشت کی سیاست ختم ہوچکی ہے۔ عوام مردہ باد کے نعرے لگانے والوں کو مسترد کر چکی ہے۔ سب جانتے ہیں کہ ملک ہوگا تو ہم ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ میں اے آر وائی نیوز کے دفتر پر حملہ کی شدید مذمت کرتا ہوں اور اے آر وائی نیوز کے عملہ کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

عمران خان آج شام نشتر پارک میں ’پاکستان زندہ باد‘ جلسہ سے خطاب کریں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top