The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم کی ایرانی صدر سے کن امور پر گفتگو ہوئی؟

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے ایران کے نومنتخب صدر سید ابراہیم رئیسی سے ٹیلی فونک رابطہ کیا، دونوں ممالک نے دو طرفہ تعاون جاری رکھنے اور تعلقات کو مزید فروغ دینے پر اتفاق کیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے آج اتوار کے روز ایران کے نو منتخب صدر ابراہیم رئیسی سے ٹیلی فونک رابطہ کیا اور حلف اٹھانے پر مبارک باد پیش کی۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ’ایران کے عوام نے آپ پر اعتماد کیا اور صدر بنایا، پاکستان اس کا خیر مقدم کرتا ہے‘۔

وزیراعظم ہاؤس کی جانب سے دونوں ممالک کے سربراہان کی گفتگو  کا مشترکہ اعلامیہ جاری کیا گیا۔ جس کے مطابق دونوں رہنماؤں نے موجودہ اقتصادی تعاون کو فروغ دینے پر اطمینان کا اظہار  اور اسے مزید فروغ دینے پر اتفاق کیا۔

اعلامیے کے مطابق دونوں ممالک کے سربراہان نے پاک ایران سرحدکے ساتھ سرحدی منڈیوں کے قیام کو ایک اہم اقدام قرار دیا، جس کے قیام سے عوام کو معاشی اور معاشرتی فوائد حاصل ہوں گے۔

مزید پڑھیں: ایرانی صدر کا صدر پاکستان کو خط

وزیراعظم عمران خان نے افغانستان کی بگڑتی ہوئی سیکیورٹی صورت حال پرتشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ’تازہ ترین پیشرفت کے بعدپاک ایران سرحدی علاقوں  میں پناہ گزینوں کی آمد متوقع ہے، جس سے پاکستان اور ایران دونوں کے لیے سنگین خطرات پیدا ہوسکتے ہیں‘۔

وزیر اعظم عمران خان نےافغانستان میں جاری تنازع کو مذاکرات اور سیاسی حل کی ضرورت پر زور دیا، دونوں رہنماؤں نےافغان تنازع سیاسی تصفیےکی سہولت کو جاری رکھنے کی ضرورت پر اتفاق کیا۔

عمران خان نے مسئلہ کشمیر  کے معاملے پر مستقل حمایت پر ایران کا شکریہ ادا کیا جبکہ مقبوضہ کشمیر، فلسطین میں انسانی حقوق کی صورت حال پر تشویش کا اظہار بھی کیا، دونوں رہنماؤں نے سلامتی کونسل قراردادوں کےمطابق دیرینہ تنازعات کوحل کرنےکی ضرورت پر زور دیا۔

یہ بھی پڑھیں: وزیراعظم عمران خان اور ترک صدر کا ایران کے نومنتخب صدر کے نام اہم پیغام

اعلامیے کے مطابق دونوں رہنماؤں نے ایک دوسرے کو سرکاری دوروں کی دعوت دی جبکہ اعلیٰ سطح کے تبادلے کو برقرار رکھنے پر بھی اتفاق کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں