The news is by your side.

Advertisement

نیپرا سے صوبوں کی نمائندگی ختم ہونے کے خلاف امتیاز شیخ سرگرم

کراچی: نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) سے صوبوں کی نمائندگی ختم ہونے کے معاملے پر وزیر توانائی سندھ امتیاز شیخ سرگرم ہو گئے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق صوبائی وزیر امتیاز شیخ نے نیپرا میں صوبوں کی نمائندگی کا اختیار ختم کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ اختیار صوبوں سے لینا اٹھارویں ترمیم پر حملے کے مترادف ہے۔

امتیاز شیخ کا کہنا تھا کہ شبلی فراز نے سینیٹ سے نیپرا ایکٹ میں ترامیم کا بل منظور کرایا، نیپرا میں نمائندے نامزد کرنا صوبوں کا اختیار ہے، نیپرا میں صوبائی حکومت کی مرضی سے نمائندے نامزد نہ ہوں تو اس پر احتجاج کریں گے۔

دریں اثنا، نیپرا نمائندوں کی نامزدگی کا اختیار واپس لینے پر امتیاز شیخ نے چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی سے رابطہ کر کے انھیں چھوٹے صوبوں کی تشویش سے آگاہ کیا، جس پر چیئرمین سینیٹ نے چھوٹے صوبوں کے مفاد کے تحفظ کے عزم کا اظہار کیا۔

اقتصادی رابطہ کمیٹی نے نیپرا ایکٹ میں ترامیم کی منظوری دے دی

امتیاز شیخ نے ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا اور سینیٹر شیری رحمان سے بھی رابطہ کر کے انھیں نیپرا ایکٹ میں ترامیم اور سندھ حکومت کی تشویش سے آگاہ کیا۔ وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کو ایک خط لکھ کر انھوں نے کہا کہ نیپرا ایکٹ میں ترامیم کا مسودہ صوبائی حکومتوں کے اختیارات پر حملہ ہے، اس پر وفاق سے احتجاج کیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں