تازہ ترین

کوئٹہ: تفتان جانیوالی بس سے اغوا کیے گئے 9 مسافر قتل

کوئٹہ:نوشکی کے قریب تفتان جانیوالی بس سے اغوا کیے...

بہاولنگر واقعے کی مشترکہ تحقیقات ہوں گی، آئی ایس پی آر

آئی ایس پی آر نے کہا ہے کہ بہاولنگر...

عیدالفطر پر وفاقی حکومت نے عوام کو خوشخبری سنا دی

اسلام آباد: عیدالفطر کے موقع پر وفاقی حکومت نے...

ایشیائی بینک نے پاکستان میں مہنگائی میں کمی کی پیشگوئی کر دی

ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان میں آئندہ مالی سال...

سنگدل شخص نے بیوی اور 7 بچوں کو قتل کر دیا

پنجاب کے علاقے مظفر گڑھ میں اجتماعی قتل کا...

فرانس میں اسلام دشمنی پر مبنی ایک اور واقعہ

فرانس میں اسلام دشمنی پر مبنی ایک اور واقعہ پیش آیا ہے کو ایک مسجد سے سؤر کا سر ملا ہے جس کی وزیر داخلہ نے سخٹ مذمت کی ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق فرانس کے مشرقی حصے میں ایک مسجد کے قریب سے ایک سؤر (اسلام میں ناپاک قرار دیا گیا جانور) کا سر ملا ہے جس کی فرانس کے وزیر داخلہ جیرالڈ درمانین نے مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسلم کمیونٹی کے خلاف ایسی کارروائی قابل قبول نہیں ہے۔

اے ایف پی کے مطابق استغاثہ نے کہا ہے کہ نسلی منافرت پر اکسانے‘ کی تحقیقات اس وقت شروع کی گئی جب جمعے کو ووسگس کے علاقے کے ایک گاؤں کی ایک مسجد میں نمازیوں کو مسجد کے باہر سے اسلام میں حرام قرار دیے گئے جانور سؤر کا سر ملا۔

فرانسیسی وزیر داخلہ نے سوشل میڈیا ایپ ایکس (سابقہ ٹوئٹر) پر ایک ٹویٹ میں کہا کہ شمالی فرانس میں دو دیگر مساجد کی بھی ’توہین‘ کی گئی۔

انہوں نے بتایا کہ اس ہفتے کے آخر میں ویلنسیئنز اور فَریزنے سور ایسکو میں مساجد کی توہین کی گئی۔ ووسگس میں موجود مسجد کو بھی نشانہ بنایا گیا۔ میں مسلمان ہم وطنوں کے خلاف ان ناقابل قبول کارروائیوں کی پرزور مذمت کرتا ہوں۔‘

خیال رہے کہ اس وقت فرانس سمیت دنیا بھر میں مسلمان اپنا مقدس ماہ رمضان المبارک عقیدت واحترام سے منا رہے ہیں جس میں امت مسلمہ میں عبادت کا جذبہ زیادہ بڑھ جاتا ہے اور یہ واقعات اسی مقدس مہینے رمضان میں رونما ہوئے ہیں جن کو مسلمانوں کو طیش دلانے کی سازش سے بھی جوڑا جا رہا ہے۔

Comments

- Advertisement -