The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ: مسلمان غیر محفوظ، عبادت گاہوں کے تحفظ کے لیے فنڈنگ بڑھانے کا اعلان

لندن: برطانوی حکومت نے ملک میں عبادت گاہوں کی سیکورٹی کے لیے فنڈنگ بڑھانے کا اعلان کر دیا ہے، وزیرِ داخلہ نے بتایا کہ عبادت گاہوں کے تحفظ کے لیے 5 ملین پاؤنڈ کا نیا فنڈ جاری ہوگا۔

برطانوی وزیرِ داخلہ ساجد جاوید کا کہنا ہے کہ اب برطانیہ میں بھی مسلمان خود کو غیر محفوظ سمجھ رہے ہیں، مسلمانوں کو تحفظ فراہم کریں گے، جس کے لیے نیا فنڈ مختص کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

وزیرِ داخلہ نے نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں دو مساجد پر آسٹریلوی شہری کی جانب سے خوف ناک حملے پر کہا کہ یہ ہماری روایات پر حملہ ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز برطانوی وزیر سیکورٹی نے برطانیہ میں بھی مسلمانوں پر کرائسٹ چرچ کے طرز پر حملوں کے خطرے کا انکشاف کرتے ہوئے کہا تھا کہ حکومت عبادت گاہوں کے تحفظ کے سلسلے میں نئے فنڈز مختص کرنے کے بارے میں سوچ رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  برطانیہ میں مسلمانوں پر کرائسٹ چرچ کی طرح حملوں کا خطرہ ہے، برطانوی وزیر

بین ویلس کا کہنا تھا کہ دائیں بازو کے شدت پسند گروہ مسلمانوں پر حملے کر سکتے ہیں، اس لیے حکومت نے انتہائی دائیں بازو اور نیو نازی گروپ کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کر دیا ہے۔

انھوں نے برطانیہ میں انتہائی دائیں بازو کے لوگوں کی تعداد میں اضافے پر برطانوی حکومت کی تشویش کا بھی ذکر کیا اور کہا کارڈف میں شدت پسندوں کے خلاف آپریشن میں کئی گرفتاریاں بھی ہوئی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں