The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کے خلاف منفی پروپیگنڈا، یورپی پارلیمنٹ میں بھارت خود جواب دہ ہوگیا

برسلز: پاکستان کے خلاف منفی پروپیگنڈے کے نتیجے میں بھارت کو خود جواب دہ بننا پڑ گیا ہے، مختلف ممالک کے کردار کے جائزے کے لیے یورپی پارلیمنٹ میں 2 روزہ سماعت مقرر ہوئی، جس میں بھارتی سازش کا پردہ چاک ہوا۔

تفصیلات کے مطابق سماعت میں بھارت کی مدد سے چلنے والی ڈس انفو لیب کا معاملہ زیر بحث آیا، خصوصی کمیٹی نے یورپی قانون سازوں کو بھارت کے منفی کردار کی آگاہی نے دی، اس کمیٹی میں پارلیمنٹ میں تمام سیاسی جماعتوں کے 33 ارکان شامل ہیں۔

یورپی پارلیمنٹ میں یہ سماعت 25 اور 26 جنوری کو آن لائن منعقد ہوئی، جو کہ جغرافیائی سیاسی لحاظ سے تیسرے ملک کی مداخلت کے خطرات پر تھی، سماعت میں بھارتی کرانیکل سے متعلق تحقیق پیش کی گئی۔

تحقیق میں بھارتی جعلی ویب سائٹس اور جعلی پیجز کا پردہ چاک کیاگیا، بتایا گیا کہ بھارتی نیٹ ورک طویل عرصے سے یورپ اور عالمی اداروں کو متاثر کر رہا تھا، جس کا مقصد ایک بھارتی سیاسی پارٹی کو فائدہ پہنچانا تھا، نیٹ ورک نے بھارتی عوام کو غلط تاثر دیا اور پاکستان کو بدنام کرنے کی کوشش کی۔

سماعت کے دوران یورپی قانون ساز ادارے نے اس امر پر تشویش کا اظہار کیا کہ کیا بھارت جھوٹ گھڑنے کی ہر حد پار کر سکتا ہے۔

پاکستان کیخلاف بھارتی شرانگیزیاں اور ڈس انفولیب کے انکشافات

محققین نے بتایا کہ تحقیق کے بعد ڈس انفو لیب محققین اور خاندانوں کو دھمکیاں دی گئیں، جس پر یورپی پارلیمان کی جانب سے ای یو ڈس انفو لیب کو دھمکیوں کی مذمت کی گئی، ڈس انفو لیب میں کہا گیا تھا کہ بھارتی نیٹ ورک جنیوا میں طلبہ کو پیسے دے کر پروپیگنڈا کراتے، اور جعلی این جی اوز بنواتے تھے۔

اس جعلی پروپیگنڈے پر یورپی پارلیمان میں منعقد کی گئی سماعت بھی مہر تصدیق بن گئی ہے۔

ای یو ڈس انفو لیب کی رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ گزشتہ 15 سال سے گھناؤنا کھیل کھیلا جا رہا ہے، بھارتی پروپیگنڈے کا مقصد پوری دنیا میں پاکستان کی ساکھ کو نقصان پہنچانا تھا، یورپی ممبران کے جعلی بیانات کو بھی میڈیا نیٹ ورکس پر شائع کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں