The news is by your side.

Advertisement

بھارت : جون میں بننے والا پل جولائی میں ٹوٹ گیا

بہار : رواں سال جون میں بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے جس پل کا افتتاح کیا وہ پل ایک ماہ بھی نہ چل سکا، دو ارب 64 کروڑ روپے کی لاگت سے بننے ولا پل ایک ہی بارش میں بہہ گیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے جس پُل کا افتتاح جون میں کیا تھا، وہ پل ایک مہینے بھی نہیں ٹھہر پایا۔ بہار کے گوپال گنج میں دو ارب 64کروڑ  روپےکی لاگت سے بنے اس پُل کو ستر گھاٹ پُل کے نام سے جانا جاتا ہے۔

پُل کی رابطہ سڑک بدھ کے روز پانی کے دباؤ کے سبب ٹوٹ گئی۔ پُل ٹوٹنے کی وجہ سے چمپارن ترہوت اور سارن کے کئی اضلاع کا رابطہ منقطع ہو گیا، پُل پر نقل و حمل پوری طرح متاثر ہو کر رہ گئی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ16 جون کو وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے پٹنہ سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے اس پل کا افتتاح کیا تھا، گوپال گنج کو چمپارن، سارن اور تروہت جیسے کئی اضلاع سے جوڑنے کے لحاظ سے یہ پُل کافی اہمیت کا حامل ہے، وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے اس پُل کی تعمیر کے لئے سنگ بنیاد 2012 میں رکھا تھا اور اس کی تعمیر کے لئے3 سالوں کا وقت مقرر کیا گیا تھا۔

گوپال گنج میں جمعرات کے روز تین لاکھ کیوسیک سے زیادہ پانی کا بہاؤ تھا، گنڈک کی اتنی بڑی آبی سطح کے دباؤ میں پُل کی رابطہ سڑک منقطع ہو گئی، بیکنٹھ پور کے فیض اللہ پور میں یہ سڑک ٹوٹی ہے جہاں اسے دیکھنے والوں کا تانتا لگا ہوا ہے۔

بی جے پی کے رکن اسمبلی متھلیش تیواری نے اس معاملہ کی اطلاع بہار کے سڑک تعمیر کے وزیر نند کشور یادو کو دی تھی، انہوں نے کہا کہ اس معاملہ کی جانچ کرنے کے لئے وہ آئندہ چار اگست کو شروع ہونے والے اسمبلی کے اجلاس میں آواز اٹھائیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں