The news is by your side.

Advertisement

لاک ڈاؤن : بھارتی پولیس کا بے گناہ نوجوان پر بہیمانہ تشدد، آنکھ ضائع ہوگئی

نئی دہلی : بھارتی پولیس نے روایتی بربریت کا مظاہرہ کرتے ہوئے کھیت سے واپس آنے والے نوجوان پر اس قدر تشدد کیا کہ اس کی آنکھ ضائع ہوگئی، تھانہ انچارج نے الزام کو مسترد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت کے ضلع بیگو سرائے کے چیریا بریار پور تھانہ کی حدود کھنجا پور گاؤں کے رہائشی نیرج کمار نے پولیس پر بے جا تشدد کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔ نوجوان کا کہنا ہے کہ مارپیٹ سے اس کی آنکھوں کی روشنی چلی گئی ہے۔

نوجوان کا کہنا ہے کہ جب وہ کھیت میں کام کرکے واہس جارہا تھا اس دوران پولیس نے لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کا الزام لگا کر اس کی پٹائی کردی، تشدد کے دوران میری آنکھ میں ڈنڈا لگا ور میری آنکھوں کی روشنی چلی گئی۔

نیرج کمار نے علاقہ ایس پی کو درخواست میں مؤقف اختیار کیا ہے کہ گزشتہ روز وہ گیہوں کٹوا کر گھر لوٹ رہا تھا، اس دوران چوک پر کسی کام سے رکا، تبھی پولیس نے اس کی پٹائی کردی مجھ ےانصاف فراہم کیا جائے۔

اس حوالے سے تھانہ انچارج پلو کمار نے الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کو دیکھ کر بھاگنے کے دوران نوجوان کو چوٹ لگ گئی تھی۔

واضح رہے کہ کچھ روز قبل بھی بیگو سرائے ضلع کے ٹریفک ڈی ایس پی نے سڑک پر گاڑی کھڑی کرنے کے الزام میں ایک بس ڈرائیور کی آنکھ پھوڑ دی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں