The news is by your side.

Advertisement

بھارت : چھوٹی سی بات پر طالب علم نے زندگی کا خاتمہ کرلیا

نئی دہلی : بھارت میں ان دنوں  خود کشی کا رجحان کافی حد تک بڑھنے لگا ہے، خصوصاً نوجوان نسل چھوٹی چھوٹی باتوں کو جواز بنا کر اپنی جان لینے کے درپے ہے۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست اترپردیش کے ضلع مراد آباد میں بارہویں جماعت کے طالب علم نے فیل ہونے کے بعد خود کو گولی مارکر ہلاک کر لیا۔

امتحان میں ناکامی کے بعد امیت نامی طالب علم نے اپنے والد کی لائسنس یافتہ بندوق سے خود کو گولی مار کر زندگی کا خاتمہ کر لیا۔

پولیس نے بندوق قبضے میں لینے کے بعد طالب علم کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دی ہے۔ ہلاک ہونے والے طالب علم کی شناخت امیت کے نام سے ہوئی ہے۔ پولیس کے مطابق امیت ایک انگریزی اسکول میں بارہویں جماعت کا طالب علم تھا۔ امت نے اپنے گھر کی دوسری منزل پر جاکر خود کو گولی مارلی ۔

اہل خانہ کے مطابق گزشتہ برس بھی امیت بارہویں جماعت میں فیل ہوگیا تھا،اس برس بھی فیل ہونے پر وہ دلبرداشتہ ہوگیا اور اس برس اس نے خود کشی کرلی، جائے واردات سے پولیس کو کوئی خط نہیں ملا۔

مزید پڑھیں : فون کے لیے بھائی سے لڑنے کے بعد لڑکی نے خود کشی کر لی

واضح رہے کہ چند روز قبل بھارتی شہر ناگپور میں ایک نوجوان لڑکی نے فون کے لیے بھائی سے جھگڑنے کے بعد اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا تھا، 19سالہ لڑکی کو اس کا بھائی اپنا موبائل فون استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے رہا تھا۔

مزید پڑھیں : ایک اور بھارتی اداکار کی خودکشی سے موت

ناگپور پولیس کا کہنا تھا کہ لڑکی نے والدین سے بھی موبائل فون خرید کر دینے کی فرمائش کی تھی تاہم گھر والوں کی خراب مالی حالت کے پیش نظر یہ فرمائش پوری نہیں ہو سکی تھی جس کے بعد لڑکی نے مایوسی کے عالم میں زہر پی لیا، حالت بگڑنے پر اسے قریبی اسپتال لے جایا گیا لیکن وہ دوران علاج ہی مر گئی۔

 

Comments

یہ بھی پڑھیں