The news is by your side.

Advertisement

بھارتی فوج کی جارحیت، گزشتہ پانچ سال کے دوران 1427 کشمیریوں کی شہادت

سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے اپنی ریاستی دہشت گردی کی جاری کارروائیوں کے دوران گزشتہ پانچ سال میں اسکالروں اور اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوانوں سمیت ایک ہزار427 کشمیریوں کو شہید کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کشمیر میڈیا سروس کے ریسرچ سیکشن کی طرف سے جاری کئے گئے اعدادو شمار سے واضح ہوا ہے کہ جنوری 2014 سے رواں سال 30 جون تک شہید ہونیوالے کشمیریوں میں 122 لڑکے اور 31 خواتین بھی شامل ہیں جبکہ 114 کشمیریوں کو بھارتی فوجیوں نے دوران حراست اور جعلی مقابلوں میں شہید کیا۔

یاد رہے کہ بھارت کے وزیر مملکت برائے داخلہ جی کشن ریڈی نے خود ہی لوک سبھا میں گفتگو کے دوران تصدیق کی ہے کہ ان پانچ برس کے دوران بھارتی فوجیوں نے مقبوضہ علاقے میں 960 سے زائد کشمیریوں کو شہید کیا ہے۔

ادھر ضلع کولگام میں بھارتی فورسز کی طرف سے مظاہرین پر طاقت کے وحشیانہ استعمال سے متعدد افراد زخمی ہو گئے۔ فوجیوں نے ضلع کولگام کے علاقے کھڈونی میں تلاشی اور محاصرے کی کارروائی کے خلا ف مظاہرے کے شرکاء کو منتشر کرنے کیلئے آنسو گیس اور پیلٹ گنز کا بے دریغ استعمال کیا۔

مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی انکوائری ہونی چاہیئے، ملیحہ لودھی

فوجیوں نے بارہمولہ کے علاقے کریری اور کپواڑہ کے علاقے کرال گنڈ میں بھی تلاشی اور محاصرے کی کارروائی شروع کی۔ حریت فورم کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں آزاد کشمیر کی وادی نیلم میں بادل پھٹنے کے باعث قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع اور مقبوضہ کشمیر کے علاقوں سوپور اور ترال میں شدید بارشوں کے باعث املاک کو پہنچے والے نقصان پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔

حریت رہنماء مشتاق الاسلام نے ایک بیان میں بھارت پر زور دیا ہے کہ وہ اپنی ریاستی دہشت گردی ترک کرکے تنازعہ کشمیر کے پائے دار حل کیلئے اقوام متحدہ کے منشور پر عمل درآمد کرے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں