The news is by your side.

Advertisement

ہندواڑہ قتل عام میں ملوث بھارتی فوج کو کٹہرے میں لایا جائے، دفتر خارجہ

اسلام آباد: ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ بھارت نے 25 جنوری 1990 کو ہندواڑہ مقبوضہ کشمیر میں نہتے عوام کا قتل عام کیا اور اب تک بھارت اسی روش پر قائم ہے، عالمی برادری اپنا کردار نبھائے۔

یہ بات انہوں نے ہندواڑہ میں بھارتی افواج کے ہاتھوں شہید ہونے والے کشمیریوں کی برسی کے موقع پر اپنے ایک بیان میں کی. انہوں نے سانحہ پر اظہارِ مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری سے بھارتی جارحیت کے خلاف موثر کردار ادا کرنے کی اپیل کی۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ قابض بھارتی فوج نہتے کشمیریوں کو مسلسل اپنے ظلم کا نشانہ بنا رہی ہے اسی طرح 26 سال قبل بھی ہندواڑہ کے مقام پر احتجاج کرنے والے 25 عام شہریوں کو موت کی نیند سلا دیا گیا تھا۔

دفتر خارجہ کے ترجمان نفیس زکریا نے سانحہ ہندواڑہ کے شہداء کے اہل خانہ سے ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے عوام ان کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں۔

انہوں نے عالمی برادری اور بالخصوص اقوام متحدہ سے ہندواڑہ قتل عام میں ملوث افراد کو قانون کے کٹہرے میں کھڑا کرنے اور بھارتی ظلم کو روکنے کے لیے اپنا کردار ادا کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں