site
stats
عالمی خبریں

چلی میں سرکاری ملازمین کا تنخواہوں میں اضافے کےلیے احتجاج

سان تیاگو :چلی کےدارلحکومت سان تیاگو میں پبلک سیکٹرملازمین نےتنخواہوں میں اضافے کےلیےاحتجاج کرتے ہوئےکچرااٹھانے سے انکارکردیا۔

تفصیلات کےمطابق سان تیاگومیں پبلک سیکٹرملازمین کی ہڑتال کےباعث دارالحکومت میں جگہ جگہ کچرےکےڈھیرنظرآرہےہیں۔ملازمین تنخواہوں میں اضافےکےلیےسراپااحتجاج ہیں۔

دارالحکومت میں احتجاج کرنےوالے مظاہرین کومنتشرکرنےکےلیے پولیس نے مظاہرین پرواٹرکینن سےپانی برسایااورلاٹھی چارج کےدوران کئی مظاہرین کوگرفتارکرلیا۔

پبلک سیکٹرملازمین نےکریک ڈاؤن اورگرفتاریوں کے باوجود مطالبات کی منظوری تک ہڑتال اوراحتجاج جاری رکھنےکےعزم کااظہارکیاہے۔

مزید پڑھیں: چلی میں پنشن سسٹم کے خلاف عوام سڑکوں پر نکل آئے

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے چلی کے دارالحکومت سان تیاگو میں 1980کی دہائی سے رائج فرسودہ پنشن سسٹم کے خلاف شہری سڑکوں پر نکل آئےتھےاور شہریوں نےپنشن سسٹم میں اصلاحات کامطالبہ کیاتھا۔

مزید پڑھیں:چلی میں طلبا کا تعلیمی اصلاحات پر عمل درآمد نہ ہونے کے خلاف احتجاج

واضح رہے کہ اس سے قبل رواں سال مئی میں چلی کے دارالحکومت سان تیاگو میں حکومت کی جانب سے تعلیمی اصلاحات پر عمل درآمد نہ ہونے پر طلبا تنظیموں کی جانب سے شدید احتجاج کیاگیاتھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top