site
stats
عالمی خبریں

کرپشن کے الزامات، انڈونیشین اسمبلی اسپیکر نے گرفتاری کے ڈر سے اسپتال میں داخل

جکارتہ : کرپشن کے الزامات پر بیمار ہونے کاسلسلہ صرف پاکستان میں نہیں، انڈونیشین اسمبلی کے اسپیکر نے بھی کرپشن کے الزامات پرگرفتاری کے ڈر سے اہسپتال میں پناہ لے لی۔

تفصیلات کے مطابق انڈونیشین پارلیمنٹ کے اسپیکر سیتیا نویتیو نے بھی کرپشن الزامات سے فرار ہونے کے لیے لیے اہسپتال کا سہارا لے لیا۔

وارنٹ نکلنے کے بعد سے سیتیا گزشتہ روز سے لاپتہ تھے اور اینٹی کرپشن کے اہلکار شہر بھر میں ان کو تلاش کر رہے تھے کہ مقامی اہسپتال سے خبر آئی کے وہ تو مقامی اہسپتال میں داخل ہیں۔

تفتیش کاروں کے مطابق انہوں نے اپنی گاڑی کھمبے سے دے ماری اور زخمی ہوکر ایمرجنسی وارڈ پہنچ گئے۔

پارلیمنٹ کے اسپیکر کچھ ماہ قبل کرپشن اسکینڈل سے بچنے کے لئے گردے، دل اور دیگر بیماریوں کا بہانہ کر کے پہلے بھی اہسپتال میں داخل ہو چکے ہیں۔

یاد رہے اس سے قبل پارلیمان کے اسپیکر پر کرپشن کے الزامات کے پیش نظر ان پر چھ ماہ کے لیے بیرون ملک کا سفر کرنے پر پابندی عائد کر دی تھی۔

اسپیکر نے پارلیمانی بجٹ میں مبینہ طور پر 170 ملین ڈالر کا غبن کیا گیا اور اس رقم کے ذریعے الیکٹرانک شناختی کارڈ خریدنے کا پلان بنایا گیا تھا۔ اب تک کی تفتیش کے مطابق کم از کم 37 سیاستدانوں کو اس اسکیم سے مالی فائدہ پہنچا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top