The news is by your side.

Advertisement

بچوں کی ذہانت والدہ سے ملنے والی میراث

ذہانت ایک خداداد صلاحیت ہے۔ یہ عموماً بغیر کسی وجہ کے کسی بھی شخص میں ہوسکتی ہے۔ بعض دفعہ یہ موروثی بھی ہوتی ہے۔ اگر خاندان میں ذہین افراد کی تعداد زیادہ ہے تو نئی آنے والی نسل بھی ذہین ہوگی۔

لیکن ماہرین نے حال ہی میں ایک انکشاف کیا ہے کہ موروثی ذہانت کا تعلق دراصل والدہ کی جانب سے ملنے والے جینز سے ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ایک بچہ اگر ذہین ہے تو اس کا کریڈٹ اس کی والدہ کو جاتا ہے۔

mothers-2

یہ نظریہ بڑے پیمانے پر کی جانے والی تحقیق کے بعد سامنے آیا جس کی وضاحت کرتے ہوئے ماہرین نے بتایا کہ نئے جسم کی تشکیل کا سبب بننے والے ایکس کروموسومز جو والدہ میں ہوتے ہیں، اپنے اندر ذہانت کے جینز رکھتے ہیں۔ ان کی موجودگی وائی کروموسومز میں نہیں ہوتی جو کہ والد میں ہوتے ہیں۔

ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ تحقیق سے پتہ چلا کہ جن بچوں میں اپنی والدہ کی جانب سے موصول ہونے والی ذہانت ضرورت سے زیادہ ہوتی ہے ان کا دماغ اور سر بڑا ہوتا ہے جبکہ ان کا جسم دیگر بچوں کے مقابلے میں چھوٹا ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں: دوران حمل نشہ کرنے والی خواتین کے بچے بدترین مسائل کا شکار

مزید پڑھیں: دوران حمل پھلوں کا استعمال بچوں کی ذہنی استعداد میں اضافے کا سبب

تحقیق کے مطابق ذہانت کا تعلق صرف وراثت سے نہیں ہوتا۔ اس کا انحصار بچپن میں میسر ہونے والے ماحول پر بھی ہوتا ہے تاہم اس کا تعلق بھی والدہ سے ہے۔

جو مائیں بچپن سے اپنے بچوں کو مختلف ذہنی مشقیں کرواتی ہیں اور ان کے ساتھ ایسے کھیل کھیلتی ہیں جس میں دماغ کا استعمال ہوتا ہو ان بچوں کی ذہانت میں نشونما اور اس میں اضافہ ہوتا ہے۔

mothers-3

ماہرین نے بتایا کہ جن بچوں کا اپنی والدہ سے گہرا تعلق ہوتا ہے وہ جذباتی طور پر بھی مستحکم ہوتے ہیں اور زندگی کے تمام مسائل کا بہادری سے سامنا کرتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں