The news is by your side.

Advertisement

ایران نے امریکا کو آبنائے ہرمز بند کرنے کی دھمکی دے دی

تہران : ایرانی حکام نے امریکا کی جانب عائد اقتصادی پابندیوں پر رد عمل دیتے ہوئے آبنائے ہرمز کو بند کرنے کی دھمکی دے دی۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے گزشتہ برس ایران کے ساتھ طے شدہ جوہری معاہدے سے انخلاء کے بعد ایران پر نئی پابندیاں عائد کرنے کا حکم بھی جاری ہوا تھا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ ایران کے سپاہ پاسداران کے سربراہ محمد باقی نے کہا کہ اگر امریکا نے بلاجواز اقتصادی پابندیاں نہ ہٹائیں تو ایران آبنائے ہرمز بند کر کے خلیجی ریاستوں سے دنیا بھر کو تیل کی سپلائی روک دے گا۔

جنرل محمد باقری کا کہنا تھا کہ اگر ایران کی برآمد نہیں کرسکتا کسی بھی ملک کو یہ اجازت نہیں ہوگی وہ تیل کے جہاز گزارے۔

ایرانی سپاہ پاسداران کے سربراہ جنرل باقری کا بیان ایسے موقع پر سامنے آیا ہے کہ جب امریکا نے ایران سے تیل درآمد کرنے والے ممالک چین، بھارت، اور ترکی سمیت 8 ممالک کو اقتصادی پابندیوں کے ضمن میں دی گئی استثنیٰ ختم کرنے کا اعلان کیا تھا جس پر ان ممالک نے بھی ایران سے تیل خریدنے پر معذرت کرلی تھی۔

مزید پڑھیں : امریکا کے بعد ایران نے بھی جوہری ڈیل سے انخلا کی دھمکی دے دی

خیال رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے نئی پاپندیوں کے بعد ایران نے بھی جوہری معاہدے سے انخلا کی دھمکی دے دی تھی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ ایران کی جانب سے یہ عندیہ امریکی نئی پابندیوں کے ردعمل میں دیا گیا ہے، خیال رہے کہ امریکا نے ایران دوست ممالک کو ایرانی تیل کی خریداری کے لیے دیا گیا استثناء ختم کردیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں