The news is by your side.

Advertisement

ایران نے کشیدگی کے خاتمے کے لیے طاقتور ممالک سے رابطے تیز کردیے

تہران: ایرانی حکام نے حالیہ کشیدگی کے خاتمے کے لیے چین اور روس سمیت دیگر طاقتور ممالک سے رابطے تیز کردیے۔

تفصیلات کے مطابق ایران کی جانب سے جوہری معاہدے کی کھلی خلاف ورزی اور برطانوی آئل ٹینکر پر قبضے کے بعد کشیدگی میں اضافہ ہوگیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے نے دعویٰ کیا ہے کہ ایران کے اعلیٰ حکومتی اہلکار عالمی طاقتوں سے رابطہ کررہے ہیں جس کا مقصد تنازعے کا خاتمہ ہے۔

دوسری جانب اوسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں ہونے والے اجلاس میں بھی ایرانی وفد نے شرکت کی، اس موقع پر چین، برطانیہ، روس اور فرانسیسی حکومتی نمائندے شریک تھے۔

اجلاس میں ایران اور برطانیہ کی جانب سے ایک دوسرے کے بحری جہازوں پر قبضے سے متعلق گفتگو ہوئی، ایران نے برطانوی اقدامات کو اشتعال انگریزی قرار دیا جبکہ لندن حکام نے بھی تہران حکومت کے اقدامات کو جوہری معاہدے کی خلاف ورزی کہا۔

حالیہ تناؤ کے بعد عالمی سیاست میں بھی حل چل مچ چکی ہے۔ امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو کا کہنا ہے کہ ایران اور امریکا میں کشیدگی ختم کرنے کے لیے اگر انہیں مذاکرات کے لیے تہران جانا پڑا تو جائیں گے۔

ایران سے کشیدگی میں کمی کے لیے تہران جانا پڑا توجاﺅں گا، امریکی وزیرخارجہ

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو نے انٹرویو میں ایران پر دہشت گردی کی حمایت اور علاقے میں خطرناک سرگرمیوں کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ امریکا ایران کے ساتھ میزائل پروگرام اور علاقے میں تہران کی سرگرمیوں کے لیے غیرمشروط طور پر مذاکرات کے لیے تیار ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں