The news is by your side.

Advertisement

عالمی طاقتوں نے ایرانی پیشکش ٹھکرادی، صاف انکار کردیا

تہران: امریکا سے عالمی طاقتوں نے حادثی طور پر یوکرینی طیارہ مارگرانے کے واقعے کی تحقیقات میں معاونت کی پیشکش کو مسترد کرتے ہوئے ایران کو صارف انکار کردیا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق ڈائریکٹر جنرل سول ایوی ایشن آف ایران حسن رضائیفر کا کہنا ہے کہ انہوں نے امریکا، کینیڈا، فرانس سمیت دیگر ممالک سے بلیک باکس کا ڈیٹا ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے سافٹ ویئر فراہم کرنے کا کہا تھا تاہم ان ممالک نے ایران کی پیشکش کو یکسر مسترد کردیا۔

انہوں نے بتایا کہ ایران کے پاس اس طرح کی حساس معلومات ڈاؤن لوڈ کرنے کی ٹیکنالوجی موجود نہیں ہے جس کی وجہ سے ایران نے امریکا، یوکرائن، سوئیڈن، انگلینڈ اور دیگر ممالک کی نامور لیبارٹریز میں بھی بلیک باکس بھیجنے کی پیشکش کی لیکن ان سب ممالک نے بھی ہماری پیشکش کو ٹھکرادیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: ایرانی کمانڈرنے یوکرین طیارے کی تباہی پر قوم سے معافی مانگ لی

ڈی جی سول ایوی ایشن کا کہنا تھا کہ تمام ممالک سے انکار کے بعد آخری آپشن کے طور پر بلیک باکس فرانس بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جہاں دستیاب وسائل سے حساس معلومات مل سکتی ہیں۔

قبل ازیں ایرانی ایرواسپیس کمانڈر علی حاجی زادے نے یوکرین طیارےکی تباہی کی ذمےداری قبول کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ واقعے پرقوم سے معافی مانگتے ہیں ، یوکرین طیارے کو غلطی سے کروز میزائل سمجھا گیا۔

علی حاجی زادے کا کہنا تھا کہ طیارے کی تباہی کا ذمےدارامریکا بھی ہے، واقعہ امریکی کی ایران سے پیداکی گئی کشیدگی کے باعث ہوا۔
یاد رہے ایران نے یوکرین کے مسافر طیارے کو غلطی سے نشانہ بنانے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا تھا کہ مسافر طیارہ نادانستہ طور پر حملے کا نشانہ بنا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں