ایرانی حکومت خطے کی سلامتی کے لیے خطرہ ہے، شاہ سلمان
The news is by your side.

Advertisement

ایرانی حکومت خطے کی سلامتی کے لیے خطرہ ہے، شاہ سلمان

ریاض: سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے کہا کہ سعودی عبر خلیج تعاون تنظیم کی کیکجہتی کا خواہاں ہے، ایرانی حکومت خطے کی سلامتی کے لیے خطرہ ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی عرب میں خلیج تعاون تنظیم کا سالانہ اجلاس ہوا، 39ویں سالانہ اجلاس کی صدارت سعودی فرمانروا شاہ سلمان کررہے ہیں، سعودی فرمانروا نے خلیج تعاون تنظیم کے اجلاس سے خطاب کیا۔

خلیج تعاون تنظیم کے سالانہ اجلاس میں امیر قطر نے شرکت نہیں کی ان کی جگہ قطری وزیر خارجہ شریک کررہے ہیں.

سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز خطے کے ممالک کی حفاظت اور دیرپا اقتصادی ترقی کے لیے ایک دوسرے کے ساتھ مل کر کام کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

مزید پڑھیں: سعودی عرب انتہا پسندی کے خلاف جنگ جاری رکھے گا، شاہ سلمان

انہوں نے کہا کہ خطے کے ممالک ایک ہی جیسے حالات کا سامنا کررہے ہیں، دہشت گردی اور فرقہ واریت سب کا مشترکہ مسئلہ ہے، یمن جنگ کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے بغاوت کچلنے تک آپریشن جاری رکھیں گے۔

شام کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ شام کے تنازع کو پر امن اور سیاسی حل کے لیے فوری اور موثر اقدامات کرے۔

قبل ازیں جی سی سی کے سیکریٹری جنرل عبداللطیف الزبانی نے شاہ سلمان کی سربراہی میں ہونے والے اجلاس کی اہمیت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ تنظیم کی مشترکہ مارکیٹ، کسٹمز یونین اور باہمی معاشی تعاون سے رکن ریاستوں کو فائدہ پہنچے گا اور اسی کے پیش نظر جی سی سی کے لیڈر سربراہ اجلاس میں شرکت کررہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں