site
stats
عالمی خبریں

نیس حملے کی ذمہ داری دولت اسلامیہ نے قبول کرلی،پانچ افراد گرفتار

پیرس: فرانس کے جنوبی شہر نیس میں جمعرات کی شب قومی دن کی تقریبات کے موقع پر ہونے والے حملے کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ نے قبول کر لی.

تفصیلات کے مطابق فرانس کے جنوبی شہر میں جمعرات کی شپ قومی دن کی تقریبات کے موقع پر حملہ آور نے تیز رفتار ٹرک شرکا پر چڑھادیا،جس سے87افرادجان کی بازی ہار گئےاور متعدد افراد زخمی ہوگئے تھے.

پیرس میں پراسیکیوٹر کے دفتر کے مطابق87افراد کو ہلاک کرنے والے شخص سے تعلق رکھنے کے شبہے میں پانچ افراد کو حراست میں لیا گیا ہے،ان میں حملہ آور کی سابقہ بیوی بھی شامل ہے.

دولت اسلامیہ کی جانب سے استعمال کی جانے والی خبر رساں ایجنسی میں کہا گیا ہے کہ نیس کا حملہ اس نے کیا ہے.

شدت پسند تنظیم کا کہنا ہے کہ یہ حملہ اس اعلان کے بعد کیا گیا جس میں کہا گیا تھا کہ ان ممالک کو نشانہ بنایا جائے جو عراق اور شام میں دولت اسلامیہ کے خلاف اتحاد میں شامل ہیں.

یاد رہے کہ ملک بھر میں پہلے ہی ایک لاکھ 20 ہزار پولیس اور فوجی اہلکار تعینات ہیں،12000 اضافی نفری میں 9000 ملٹری پولیس افسران شامل ہیں جبکہ آگے چل کر مزید 3000 پولیس افسران بھی شامل کیے جائیں گے.

محکمہ صحت کے حکام نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے87افراد میں 10 بچے شامل ہیں، جبکہ زخمی ہونے والے 303 افراد میں سے 121 اب بھی اسپتالوں میں زیر علاج ہیں،جن میں 30 بچے شامل ہیں،زخمیوں میں سے 26 کو انتہائی نگہداشت میں رکھا گیا ہے.

واضح رہے کہ حملہ آور 31 سالہ احمد لحوائج بوہلال نیس کا ہی رہائشی ہیں اور پولیس نے حملہ آور کے فلیٹ کی تلاشی بھی لی ہے.

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top