The news is by your side.

Advertisement

داعش کے جنگجو افغانستان کا رخ کررہے ہیں، امریکا کا دعویٰ

واشنگٹن: امریکا نے دعویٰ کیا ہے کہ شام اور عراق میں شکست کھانے کے بعد عالمی عسکریت پسند تنظیم داعش اب افغانستان کار رخ کررہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق اس سے قبل بھی متعدد بار انکشاف ہوا ہے کہ داعش افغانستان میں اپنے پنجے جما رہا ہے، تاکہ افغانستان سے شدت پسند کارروائیاں جاری رکھ سکے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق کابل میں امریکی خفیہ ایجنسی کے ایک اعلیٰ عہدیدار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا ہے کہ شام اور عراق میں خونریز حملے کرنے والے داعش کے عسکریت پسند وہاں قائم کی گئی ’خلافت‘ کے خاتمے کے بعد افغانستان پہنچ رہے ہیں۔

شام اور عراق میں امریکا نے اتحادی ممالک کے ساتھ مل کر داعش کے خاتمے کا اعلان کیا تھا تاہم گذشتہ روز آئی ایس آئی ایس سربراہ بغدادی کے ویڈیو بیان کے بعد حکام کو تشویش لاحق ہے۔

امریکی عہدیدار نے مزید دعویٰ کیا ہے کہ داعش کے کچھ اراکین افغانستان پہنچ کر اپنا تجربہ اور مہارت مقامی عسکریت پسندوں کو فراہم کر رہے ہیں۔

حکام نے خبردار کیا ہے کہ اگر افغانستان میں داعش کے خلاف دباؤ نہ بڑھایا گیا تو یہ تنظیم ایک سال کے اندر اندر امریکا میں کوئی بڑا حملہ کر سکتی ہے۔

دوسری جانب امریکی وزیر خارجہ نے اعلان کیا ہے کہ داعش تنظیم کے آزاد رہنماؤں کا مقام معلوم کر کے انہیں ہزیمت سے دوچار کیا جائے گا۔

داعش سربراہ کا ویڈیو بیان سامنے آنے کے بعد امریکا کا دو ٹوک اعلان

خیال رہے کہ داعش کے سربراہ ابوبکر البغدادی کا پانچ برس بعد نیا ویڈیو بیان سامنے آیا جس کے امریکا سمیت دنیا بھر میں‌ کھلبھلی مچ گئیں وہی امریکا کو بھی پریشانی شروع ہوگئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں