The news is by your side.

Advertisement

اسلام آباد ہائی کورٹ: منظور پشتین، محسن داوڑ، علی وزیر کو نوٹس جاری

اسلام آباد: وفاقی دار الحکومت کے ہائی کورٹ میں آج ریاستی اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی اور اکسانے کے کیس کی سماعت ہوئی، عدالت نے پی ٹی ایم کے رہنماؤں کو نوٹسز جاری کر دیے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں ریاستی اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کیس کی سماعت ہوئی، عدالت میں پشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) پر پابندی کے لیے درخواست دی گئی تھی۔

وکیل درخواست گزار نے عدالت سے کہا کہ پی ٹی ایم رہنماؤں کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس بند کرنے کا حکم جاری کیا جائے۔

بیرسٹر شعیب نے عدالت کو بتایا کہ پی ٹی ایم رجسٹرڈ سیاسی جماعت نہیں ہے، اور استدعا کی کہ اس پر پابندی عائد کی جائے۔

یہ بھی پڑھیں:  چند لوگ فاٹا میں امن اور ترقی کا عمل سبوتاژ کرنا چاہتے ہیں، شوکت یوسفزئی

عدالت نے سیکرٹری داخلہ، دفاع، اور قانون و انصاف کو نوٹسز جاری کر دیے، عدالت کی جانب سے پیمرا اور پی ٹی اے کو بھی نوٹسز کے ذریعے جواب طلب کر لیا گیا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے پی ٹی ایم کے رہنماؤں منظور پشتین، ایم این اے محسن داوڑ، اور ایم این اے علی وزیر کو بھی نوٹس جاری کر دیے اور ان سے تحریری جواب طلب کر لیا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے کیس کی سماعت 2 ہفتے تک ملتوی کر دی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں