The news is by your side.

Advertisement

شام: اسرائیل کی فضائی کارروائی، شامی فوجیوں سمیت 23 افراد جاں بحق

دمشق: اسرائیلی فورسز نے شام میں فضائی کارروائی کی جس کے نتیجے میں شامی فوجیوں سمیت 23 افراد جاں بحق ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق شام میں اسرائیلی فضائی حملوں میں کم از کم 23 ہلاکتیں سامنے آئیں، جن میں شامی صدر بشار الاسد کے حمایت یافتہ جنگجو بھی شامل ہیں، علاوہ ازیں ہلاک ہونے والوں میں پانچ شامی فوجی شامل ہیں۔

عالمی میڈیا کے مطابق اس کارروائی میں 28  اسرائیلی جنگی طیاروں نے تقریبا ستر میزائل فائر کیے، قبل ازیں شامی حالات پر نگاہ رکھنے والی تنظیم سیرئین آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کا کہنا تھا کہ ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

خیال رہے کہ اسرائیل کی جانب سے یہ دعویٰ کیا جارہا ہے کہ یہ کارروائی گذشتہ شب شام سے ایرانی راکٹ حملوں کے جواب میں کی گئی ہے، علاوہ ازیں گذشتہ روز اپنے بیان میں اسرائیلی حکام کا کہنا تھا کہ شام میں تقریبا تمام ’ایرانی ڈھانچے‘ تباہ کر دیے گئے ہیں۔

ایرانی افواج کی جانب سے گولان کی پہاڑیوں پر میزائل حملے

یاد رہے کہ اسرائیل اور ایران کے درمیان کشیدہ صورت حال ہے، اسرائیل کی جانب سے یہ الزام بھی عائد کیا گیا ہے کہ ایران شام کے گولان پہاڑی سلسلے پر میزائل فائر کر رہا ہے جس کا مقصد اسرائیلی فورسز کو نقصان پہنچانا ہے۔

اسرائیل کی جانب سے یہ بیان دیا جاتا رہا ہے کہ وہ ایران کی افواج کی شام میں موجودگی برداشت نہیں کرے گا اور اس سے قبل بھی اسرائیلی حملوں سے شام میں ایرانی شہریوں کی ہلاکت کا الزام لگایا جاتا رہا ہے تاہم اسرائیل کا کہنا تھا کہ اس قسم کی کارروائیوں کو کسی صورت قبول نہیں کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ گولان کی پہاڑیوں پر عرب اسرائیل جنگ کے بعد سے اسرائیل کا قبضہ ہے، جس کے باعث صیہونی افواج نے مذکورہ علاقے کو ریڈزون بنایا ہوا ہے اور وہاں بارودی سرنگیں بھی بچھائی ہوئی ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں