اسرائیلی فورسز کی بے دریغ فائرنگ، فلسطینی نوجوان شہید Palestinian youth martyred
The news is by your side.

Advertisement

اسرائیلی فورسز کی بے دریغ فائرنگ، فلسطینی نوجوان شہید

یروشلم : صیہونی ریاست اسرائیل کے فوجیوں کی اپنے حق میں احتجاج کرنے والے فلسطینی شہریوں پر اندھا دھند فائرنگ کے نتیجے میں فلسطینی نوجوان شہید جبکہ درجنوں افراد زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ فلسطین پر غاصب صیہونی ریاست اسرائیل کی درندہ صفت فورسز کا فلسطین کے شہریوں پر ظلم و تشدد تھمنے کا نام ہی نہیں لے رہا، طاقت کے نشے میں چور اسرائیلی فورسز کے اہلکاروں نے غزہ کی پٹی پر احتجاج کرنے والے مظاہرین پر بے دریغ گولیاں برسا دیں۔۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ صیہونی ریاست کی ظالم فورسز نے مشرقی کی غزہ کی سرحد پر صدائے احتجاج بلند کرنے والے فلسطینی شہریوں پر اندھا دھند گولیوں کا نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں ایک فلسطینی نوجوان شہید ہوگیا۔

فلسطینی وزارت صحت کا کہنا تھا کہ اسرائیلی فوجیوں فائرنگ سے شہید ہونے والے نوجوان کی شناخت 17 سالہ منتصر محمد اسماعیل کے نام سے ہوئی تھی۔

فلسطینی وزارت صحت کے ترجمان کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی اہلکاروں نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے شیلنگ اور فائرنگ کی تھی جس کے باعث نوجوان شدید زخمی ہوگیا، طبی عملہ زخمی محمد اسماعیل کو اسپتال لے گیا تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دوران شہید ہوا تھا۔

دوسری مقبوضہ فلسطین کے علاقے دیر البح میں بھی صیہونی ریاست کے دہشت گرد فوجیوں کی فائرنگ سے 7 فلسطینی شہری زخمی ہوئے تھے۔


مزید پڑھیں : اسرائیلی فورسز کی فائرنگ سے 150 سے زائد فلسطینی شہری زخمی


یاد رہے کہ جمعے کے روز اسرائیلی فورسز کی جانب سے تحریک حق واپسی کے تحت اسرائیلی سرحد پر احتجاج کرنے والے نہتے فلسطینیوں پر اندھا دھند فائرنگ کے نتیجے میں 150 سے زائد افراد زخمی ہوئے تھے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ صیہونی افواج نے جمعے کے روز تحریک حق واپسی کے تحت اسرائیل اور غزہ کہ سرحد پر مظاہرہ کرنے والے ہزاروں فلسطینیی شہریوں طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں