The news is by your side.

Advertisement

اسرائیلی جارحیت، ایک اور فلسطینی طالب علم شہید

غزہ: فلسطین میں اسرائیلی جارحیت کا سلسلہ بدستور جاری ہے، ایک اور فلسطینی طالب علم کو فائرنگ کرکے شہید کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق غزہ میں اسرائیلی فوج نے ایک بار پھر نہتے اور پرامن مظاہرین پر بلا اشتعال فائرنگ کرکے پندرہ سالہ فلسطینی لڑکے کو شہید کردیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ غزہ کی وزارت صحت کے مطابق سیکڑوں فلسطینی غزہ کی سر حدی پٹی کے قریب اسرائیلی جارحیت اور ناجائز قبضے کے خلاف پرامن مظاہرہ کررہے تھے۔

اسرائیلی فوج نے مظاہرین پر اندھا دھند فائرنگ کردی، جس کے نتیجے میں پندرہ سالہ طالب علم شہید ہوگیا۔

گزشتہ سال تیس مارچ سے شروع ہونے احتجاج کے دوران اب تک دو سوساٹھ سے زائد فلسطینی شہید جبکہ زخمیوں کی تعداد تیس ہزار تک پہنچ گئی ہے۔

اسرائیلی فوج کی نہتے فلسطینیوں کے خلاف کارروائیاں عروج پر ہیں، وحشیانہ کریک ڈاؤن میں گزشتہ دنوں صبح کے وقت 21 فلسطینیوں کو گرفتار کیا گیا۔

بعد ازاں حماس نے غرب اردن سے فلسطینی اتھارٹی کی پولیس کے ہاتھوں فلسطینی طالبعلم موسیٰ الدویکات کی گرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا تھا کہ غرب اردن میں فلسطینی قوم کو عباس ملیشیا ءکی شکل میں ہیجان خیز مافیا کا سامنا ہے۔

غزہ: طالبعلم سمیت متعدد فلسطینیوں کی گرفتاری کا معاملہ، حماس کا شدید ردعمل

خیال رہے کہ غزہ پٹی میں اسرائیلی جارحیت اور قبضے کے خلاف ہفتہ وار مظاہرہ کیا جاتا ہے، صیہونی فوج کی جانب سے مظاہرے کو ناکام بنانے کے لیے نہتے فلسطینوں پر اندھا دھن فائرنگ معلوم کی بات ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں