The news is by your side.

Advertisement

عمران خان پسپا ہوگئے، یوم تشکر نہیں یوم تضحیک منائیں، جاوید ہاشمی

ملتان: تحریک انصاف سے منحرف اور ن لیگ کے سابق رہنما جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ اگر پہلے دھرنے میں عمران خان میری بات سن لیتے تو آج یہ دن دیکھنا نہ پڑتا، کیا سپریم کورٹ ایک رات میں کیس کا فیصلہ سنادے گی؟ عمران خان نے پسپائی اختیار کی وہ یوم تشکر نہیں یوم تضحیک منائیں۔


یہ پڑھیں: تحریک انصاف کل یوم تشکر منائے گی


ملتان میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ بلند بانگ دعوے کیے جاتے ہیں اور پھر یوم فتح اور مخالف کے یوم شکست کا اعلان کردیا جاتا ہے حالاں کہ عمران خان نے پسپائی اختیار کی۔

جاوید ہاشمی نے کہاکہ یہ کرکٹ نہیں سیاست ہے، کرکٹ کے اصول اور ہوتے ہیں اور جب کہ سیاست کے اصول اور، سپریم کورٹ نواز شریف کو کیسے ہٹاسکتی ہے کیا اس کے پاس اختیارات ہیں؟ کیا سپریم کورٹ ایک رات میں کیس کا فیصلہ کردے گی ؟ یہاں تو پانچ پانچ سال تک کمیشن کا فیصلہ نہیں آتا، اصل میں کہیں اور سے رہنمائی نہ ملنے پر عمران نے ایسا فیصلہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ شیخ رشید نے بیان دیا ہے کہ مجھے عمران خان کے لال حویلی نہ آنے کا گلہ ہے، عمران خان نے پریس کانفرنس میں کہا کہ میں کپتان ہوں فیصلے خود کرتا ہوں اور بےچارے شیخ رشیدکو جھاڑ پلادی،عمران خود کو عقل کل سمجھتے ہیں، ڈنڈ اور بیٹھکیں لگا لگا کر قوم کودکھاتے تھے۔

جاوید ہاشمی کا کہنا تھا کہ عمران نے تو اب پاناما لیکس پر جواب مانگنا چھوڑ دیا ہے، یوم تشکر منارہے ہیں، سیاست دان وہ بن جاتے ہیں جنہیں سیاست کی الف ب نہیں پتا ، انہیں کچھ بتائیں تو ناراض ہوتے ہیں۔

عمران خان کے یوم تشکر کے اعلان پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ابھی یہ وکٹری اسٹینڈ پر نہیں پہنچے اور یوم تشکر منارہے ہیں، یہ یوم تشکر نہیں یوم تضحیک ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ فوج نے ثابت کردیا کہ وہ نیوٹرل ہے،آرمی چیف کی تقرری کا اختیار وزیراعظم کے پاس ہے، متنازع خبر کے معاملے پر ان کا کہنا تھا کہ نیوز لیکس پر صرف کور کمانڈرز کے نہیں بلکہ پوری قوم کے تحفظات ہیں۔

جاوید ہاشمی نے مزید کہا کہ عمران خان کی سیاست ان لوگوں کو سپورٹ کررہی ہے جو سی پیک کی تکمیل نہیں چاہتے، عمران جانتے ہوئے یا نہ جانتے ہوئے سی پیک کے خلاف سیاست کررہے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں