The news is by your side.

Advertisement

قبائلی عوام کے حقوق کے لیے پارلیمنٹ کے سامنے دھرنا دیں گے، سراج الحق

پشاور : امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ قبائلی عوام کو شاباش تو ہر کوئی دیتا ہے لیکن حقوق دینے کو کوئی تیار نہیں ہے۔

امیر جماعت اسلامی پشاور میں میڈیا سے گفتگوکر رہے تھے اس موقع پرنہوں نے ایف سی آر کے خاتمہ اور قبائلی علاقوں کا خیبرپختونخوا میں انضمام کے لئے اگست کے آخر میں لانگ مارچ اور پارلیمنٹ ہاوس کے سامنے دھرنے کا اعلان کرتے ہوئے قبائلی معاملے ہر حکومت پر دباؤ دالنے کا عندیہ دے دیا ہے۔

امیر جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ قبائلی عوام کی بات سننے والا کوئی نہیں جنہیں شاباش تو ہرکوئی دیتا ہے مگر حقوق کوئی نہیں دیتا اور اس طرز عمل سے قبائلی عوام میں احساس محرومی پھیل رہا ہے اور قبائلی عوام میں تشویش پائی جاتی ہے۔

سراج الحق نے مزید کہا کہ مشکل کی اس گھڑی مین ھماعت اسلامی اپنے قابائلی بھائیوں کو تنہا نہیں چھوڑے گی اور قبائلی عوام کے حقوق کے لیے سطح پر آواز اٹھائے گی جس کے لیے بیس جولائی سے دس اگست تک تمام قبائلی علاقوں میں احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے۔

امیر جماعت اسلامی سراج الحق کا کہنا تھا کہ احتجاجی مظاہروں پر ایکشن نہیں لیا گیا تو اگلے مرحلے میں اسلام آباد لانگ مارچ اور پارلیمنٹ ہاوس کے سامنے دھرنا دیں گے جس کے لئے تمام سیاسی جماعتوں سے رابطے کئے جارہے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں