The news is by your side.

Advertisement

خطاب کے دوران جوبائیڈن کی زبان پھسل گئی

واشنگٹن: امریکی صدر جو بائیڈن غلطی سے مسٹیک کر گئے۔ پہلے اسٹیٹ آف یونین خطاب کے دوران جو بائیڈن کی زبان پھسل گئی۔

امریکی صدر جو بائیڈن نے اپنے خطاب کے دوران یوکرین پر روسی جارحیت کے خلاف زور دیتے ہوئے ”یوکرینی“ کی بجائے ”ایرانی“ عوام کہہ دیا۔

جو بائیڈن نے کہا کہ روسی صدر ولادیمیر پیوٹن یرکرین کے دارالحکومت کیف کو ٹینکوں سے گھیر سکتے ہیں لیکن وہ کبھی بھی ”ایرانی“ عوام کے دلوں اور روحوں کو نہیں جیت سکتے۔

امریکی صدر کی غلطی جنگل میں آگ کی طرح پھیلی گئی۔ سوشل میڈیا پر لفظ ”ایرانی“ کے ساتھ ٹرینڈ کر رہے ہیں۔

اس سے قبل بھارت کے وزیر اعظم نریندر مودی کی زبان سے ادا ہونے والے الفاظ سوشل میڈیا پر مذاق بن کر رہ گئے تھے۔

نریندر مودی برہما کماری تنظیم کے زیرِ اہتمام پروگرام ”آزادی کے امرت مہوتسو گولڈن انڈیا“ پروگرام سے خطاب کر رہے تھے کہ اس دوران انہوں نے حکومت کی ”بیٹی بچاؤ، بیٹی پڑھاؤ“ مہم کا تذکرہ کیا تو اس دوران ان کی زبان پھسل گئی اور انہوں نے بیٹی بچاؤ، بیٹی پڑھاؤ کے بجائے ”بیٹی پٹاؤ“ کہہ ڈالا۔

مودی کے زبان پھسلنے کی دیر تھی کہ گویا ٹوئٹر صارفین کو تفریح کا نیا سامان مل گیا اس کے بعد ٹوئٹرز نریندر مودی سے متعلق میمز سے بھر گیا تھا۔

کانگریس نے مودی کی زبان پھسلنے کے معاملے پر ردِ عمل دیتے ہوئے کہا تھا کہ جو دماغ میں چل رہا تھا وہ زبان پر آگیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں