اسرائیل سے زمین واپس لینا اردن کی قومی مفاد میں ہے، شاہ عبداللہ jordan
The news is by your side.

Advertisement

اسرائیل سے زمین واپس لینا اردن کے قومی مفاد میں ہے، شاہ عبداللہ

عمان : اردن کے بادشاہ شاہ عبداللہ دوّم نے عوامی مطالبے کو منظور کرتے ہوئے 25 برس قبل امن معاہدے کے تحت اسرائیل کو دی گئے علاقوں کی لیز میں اضافے سے انکار کا کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اردن کے بادشاہ شاہ عبداللہ دوّم نے 25 برس قبل غاصب صیہونی ریاست اسرائیل کو لیز پر دی گئی اردن کی زمین واپس لینے کا اعلان کردیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ اردن کی حکومت نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر شاہ عبداللہ دوّم کے اعلان کے متعلق بتایا کہ شاہ عبداللہ نے اسرائیل کو لیز پر دئیے گئے علاقے الباقورہ اور غمرہ کو امن معاہدوں سے نکالنے کا فیصلہ کیا ہے۔

شاہ عبداللہ دوّم کا کہنا ہے کہ الباقورہ اور غمرہ ہماری ترجیحات کا اوّلین حصّہ ہے اور ان زمینوں کا اسرائیل سے واپس لینا ہماری عوام کے قومی مفاد میں ہے۔

خیال رہے کہ صیہونی ریاست اسرائیل کی حکومت نے 25 برس قبل امن معاہدے کے نام پر اسرائیل اور اردن کے سرحدی علاقوں الباقورہ اور غمرہ کو لیز پر لیا تھا جو 25 اکتوبر کو اختتام ہوجائے گی۔

شاہ عبداللہ کے بیان پر اسرائیل کے انتہا پسند وزیر اعظم نیتن یاہو نے کہا ہے کہ اردن سے لیز پر حاصل کے گئے علاقوں کی لیز میں توسیع کے لیے مذاکرات کیے جائیں گے۔

غاصب صیہونی ریاست کے وزیر اعظم نیتن یاہو کا کہنا تھا کہ خطے میں امن و استحکام کےلیے مصر اور اردن کے ساتھ ہونے والا معاہدہ بہت اہمیت کا حامل ہے۔

واضح رہے کہ اردن کے ارکان 87 پارلیمنٹ نے اسرائیل کو دی گئے علاقے واپس لینے کےلیے پٹیشن دائر کررکھی ہے، بادشاہ شاہ عبداللہ نے اراکین پارلیمنٹ کے دباؤ میں آکر لیز پر دی گئی زمینیں واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ اردن میں شہری اسرائیل کے ساتھ طے ہونے والے امن معاہدے کے خلاف گزشتہ کئی روز سے سراپا احتجاج ہیں اور شاہ عبداللہ سے مطالبہ معاہدے میں توسیع کرنے سے منع کررہے ہیں

یاد رہے کہ اردن اور اسرائیل کے درمیان طے ہونے والا امن معاہدہ سنہ 1994 نومبر میں شاہ عبداللہ کے والد شاہ حسین اور اسرائیلی وزیر اعظم اسحاق رایبن کے درمیان طے ہوا تھا جس کے تحت الباقورہ اور غمرہ کی زمین 25 سال کے لیے اسرائیل کو لیز پر دی گئی تھیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں