The news is by your side.

جولیان اسانج کیس : بس بہت ہوگیا! آسٹریلوی وزیراعظم کا امریکا سے مطالبہ

آزادی اظہار کے لیے سرگرم کارکن اور وکی لیکس کے بانی جولیان اسانج خفیہ دستاویزات کے ایک وسیع ذخیرے کی اشاعت سے متعلق الزامات کے تحت سال 2019 سے جیل میں قید ہیں۔

اس حوالے سے آسٹریلیا کے وزیراعظم نے امریکا سے وکی لیکس کے بانی جولیان اسانج کیخلاف کارروائی ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق آسٹریلوی وزیراعظم کہا ہے کہ بس بہت ہوگیا آسٹریلوی شہری جولیان اسانج کیخلاف کارروائی بند کی جائے۔

انہوں نے امریکی حکام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ بہت ہوگیا اسانج کیخلاف کارروائی ختم کریں، اب وقت آگیا ہے کہ اس معاملے کو جلد کسی نتیجے پر پہنچایا جائے۔

غیرملکی نشریاتی ادار کے مطابق جون میں برطانیہ نے جولیان اسانج کو امریکا کے حوالے کرنے کی منظوری دی تھی، امریکا جولیان اسانج کیخلاف قانونی کارروائی کا ارادہ رکھتا ہے۔

آسٹریلوی شہری جولیان اسانج2019سے لندن کی ہائی سیکیورٹی جیل میں قید ہیں۔ انہوں نے 23 مارچ کو لندن کی انتہائی سکیورٹی والی بیلمارش جیل میں ایک مختصر تقریب کے دوران دو بچوں کی ماں اسٹیلا مورس سے شادی کی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں