The news is by your side.

Advertisement

ہمارے نظام میں فیصلے بہت دیر سے ہوتے ہیں: جسٹس قاضی فائز عیسیٰ

اسلام آباد: سپریم کورٹ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کا کہنا ہے کہ عوام کوشکایت ہے فیصلے برسوں بعد ہوتے ہیں، ہمارے نظام میں فیصلے بہت دیر سے ہوتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جتنے قانون بنتے ہیں وہ انگریزی زبان میں بنتے ہیں، سمجھ نہیں آتا وہی قانون اردو میں کیوں شائع نہیں ہوسکتا۔

جسٹس قاضی کا کہنا تھا کہ مجھے کہا گیا کہ آپ بہت بہادر ہیں، میں نے کہا جج کو بہادر نہیں ڈرپوک ہونا چاہیئے۔ بہادر جج وہ ہوگا جو حق میں فیصلہ دے گا۔

انہوں نے کہا کہ جج کو اللہ اور آئین کا ڈر ہونا چاہیئے، ہمارے نظام میں فیصلے بہت دیر سے ہوتے ہیں۔ عوام کوشکایت ہے فیصلے برسوں بعد ہوتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں