The news is by your side.

Advertisement

قندھار پولیس چیک پوسٹ حملہ، گھمسان کی لڑائی میں 22 پولیس اہلکار اور 40 طالبان ہلاک

کابل: قندھار میں پولیس چیک پوسٹوں پر طالبان حملے کو ناکام بناتے ہوئے سیکیورٹی اہلکاروں نے سخت مقابلے کے بعد 40 طالبان کو ہلاک کردیا اس دوران 22 پولیس اہلکار جاں بحق ہلاک اور 15 زخمی ہوگئے.

تفصیلات کے مطابق 50 سے زائد طالبان جنگجو پیر کی رات ضلع میوند اور زہاری میں واقع پولیس چیک پوسٹوں پر حملہ آور ہوئے جس کے بعد پولیس اہلکاروں اور طالبان کے درمیان گھمسان کا مقابلہ علی الصبح تک جاری رہا.

افغان میڈیا کے مطابق سیکیورٹی اہلکاروں اور طالبان جنگجوؤں کے درمیان ہونے والے مقابلے میں 22 پولیس اہلکار جاں بحق اور 15 زخمی ہوگئے جب کہ اس دوران 40 طالبان ہلاک ہوگئے اور باقی فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے.

ترجمان قندھار پولیس کا کہنا تھا کہ طالبان جنگجوؤں نے رات کی تاریکی کا فائدہ اُٹھاتے ہوئے پولیس چیک پوسٹوں کو نشانہ بنایا تاہم مستعد پولیس اہلکاروں نے بھرپور جوابی کارروائی کرتے ہوئے 40 طالبان کو موت کے گھاٹ اتار دیا اور اس دوران ترجمان نے 22 فرض شناس اہلکاروں نے اپنی جانوں کے نذرانے پیش کیے.

انہوں نے کہا کہ پولیس چیک پوسٹوں پر طالبان جنگجوؤں کا یہ حملہ گزشتہ چند برسوں میں سب سے بڑا حملہ تھا جس کے دوران پولیس اہلکاروں نے چار خود کش حملہ آوروں کو بھی عبرت ناک موت سے ہمکنار کیا.


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں