The news is by your side.

کنور خالد یونس نے ایم کیو ایم لندن سے لاتعلقی کا اظہار کردیا

سابق رکن قومی اسمبلی کنور خالد یونس کی نظر بندی کے خلاف سندھ ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی جہاں کنور خالد یونس نے ایم کیو ایم لندن سے لاتعلقی کا اظہار کردیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق سابق رکن قومی اسمبلی کنور خالد یونس نظر بندی کے خلاف سندھ ہائیکورٹ میں درخواست کی سماعت ہوئی جس میں درخواست میں آئی جی سندھ، ہوم سیکریٹری اور ایس ایس پی جنوبی کو فریق بنایا گیا ہے۔

درخواست کی سماعت کے موقع پر کنور خالد یونس عدالت میں پیش ہوئے اور کہا ہے کہ میری عمر 78 سال ہو چکی ہے اور متعدد امراض میں مبتلا ہوں، اس موقع پر انہوں نے ایم کیو ایم لندن سے لاتعلقی کا اظہار کیا۔

درخواست گزار کے وکیل شوکت حیات ایڈووکیٹ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ درخواست گزار نے پولیس اور رینجرز حکام کو بتایا کہ اس کا سیاسی سرگرمیوں سے تعلق نہیں، اس کے باوجود حکام نے نظر بندی کا نوٹیفکیشن واپس نہیں لیا۔

ایڈووکیٹ شوکت حیات نے کہا کہ میرا موکل متحدہ قومی موومنٹ لندن سمیت کسی سیاسی جماعت کی سرگرمی میں ملوث نہیں، اس لیے نظربندی کا حکم غیر قانونی قرار دیا جائے۔

عدالت نے درخواست پر فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے چار ہفتوں میں جواب داخل کرانے کی ہدایت کی ہے۔

واضح رہے کہ ایم کیو ایم لندن نے رواں سال مارچ میں کنور خالد یونس کو ڈپٹی کنوینر مقرر کرنے کا اعلان کیا تھا جس کے بعد حکومت سندھ نے اپریل میں ان کی نظر بندی کا نوٹیفکیشن جاری کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں