کراچی: ناظم آباد میں فائرنگ، دوا ساز کمپنی کا مینیجر جاں بحق
The news is by your side.

Advertisement

کراچی: ناظم آباد میں فائرنگ، دوا ساز کمپنی کا مینیجر جاں بحق

کراچی: شہر قائد کے علاقے ناظم آباد میں فائرنگ کا واقعہ پیش آیا جس کے نتیجے میں اصغر نامی شہری جاں بحق ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے ناظم آباد میں واقع انڈر بائی پاس کے قریب نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے گاڑی کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں ڈی ایس پی کا چھوٹا بھائی اور دوا ساز کمپنی کا مینیجر جاں بحق ہوا۔

پولیس کے مطابق مقتول کی شناخت اصغر کے نام سے ہوئی جو ملیر کا رہائشی ہے، فائرنگ کے وقت گاڑی میں خاتون بھی سوار تھیں جو واقعے کے بعد رکشے میں بیٹھ کر چلی گئیں۔

قانون نافذ کرنے والے ادارے اور پولیس نے جائے وقوعہ سے تین خول اور گاڑی کو قبضے میں لے کر تفتیش کا آغاز کردیا جبکہ مقتول کے جسد خاکی کو قانونی کارروائی کے لیے عباسی شہید اسپتال منتقل کردیا۔ حکام نے گاڑی میں سوار خاتون کی تلاش بھی شروع کردی تاکہ بیان ریکارڈ کیا جاسکے۔

بعدازاں فائرنگ کے بعد گاڑی سے اتر کر فرار ہونے والی خاتون فرحت سلطانہ نے اپنا بیان پولیس کو ریکارڈ کرایا جس میں اُن کا کہنا تھا کہ ’ہم ایک ہی دفتر میں کام کرتے ہیں اور  مجھ سمیت  3 لڑکیاں روزانہ اصغر کے ساتھ دفتر سے واپس جاتے تھے، آج اتفاق سے میں اکیلی تھی اور واقعہ رونما ہوگیا‘۔

خاتون عینی شاہد کے مطابق موٹرسائیکل پرسوارملزمان نے انڈر بائی پاس کے قریب گاڑی کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں اصغر کو گولیاں لگیں، میں خوفزدہ ہوکررکشےمیں بیٹھ کرگھرکیلئےنکل گئی تھی البتہ پولیس کو جو مددچاہیے تعاون کے لیے تیار ہوں۔

مزید پڑھیں: انتظار کیس میں ایک اور موڑ، مدیحہ کیانی اپنے ویڈیو بیان سے مکر گئیں

دوسری جانب ریسکیو حکام کے مطابق ہجرت کالونی میں واقع عباسیہ مسجد کے قریب سے 3 دن پرانی لاش برآمد ہوئی جسے پوسٹ مارٹم کے لیے جناح اسپتال منتقل کیا گیا۔

یاد رہے کہ رواں برس کے آغاز پر ڈیفنس کے علاقے میں افسوسناک واقعہ پیش آیا تھا کہ جب ملائشیا سے پاکستان آئے نوجوان انتظار حسین کو   اینٹی کار لفٹنگ کے اہلکاروں نے کو فائرنگ کر کے قتل کردیا تھا، واقعے کے وقت مدیحہ نامی خاتون مقتول کی گاڑی میں موجود تھیں جو فائرنگ کے بعد اتر کر رکشے میں بیٹھ کر چلی گئی تھیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں