The news is by your side.

Advertisement

کراچی کے سیوریج سسٹم کی تباہی کا سب سے بڑا سبب پلاسٹک ہے، مرتضیٰ وہاب

جامعہ کراچی نے پلاسٹک کی تھیلی پر پابندی لگادی

کراچی: صوبائی مشیر ماحولیات اور قانون مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ ہمارے سیوریج سسٹم کے مسائل کی سب سے بڑی وجہ پلاسٹک کی تھیلیاں ہیں، یہ تھیلیاں کوئی ادارہ نہیں بلکہ ہم اور آپ ڈال خود ڈال رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جامعہ کراچی انتظامیہ کے زیر اہتمام کراچی یونیورسٹی میں”ماحولیاتی آگاہی اور شجرکاری مہم2019“ کے حوالے سے سیمینار کا انعقاد کیا گیا جس میں مرتضیٰ وہاب نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔

تقریب کے شرکات سے خطاب کرتے ہوئے اُن کا کہنا تھا کہ ’’کسی بھی معاشرے کی ترقی اور بہتری کے لئے ضروری ہے اس معاشرے کے ہر فرد کو آگاہی اور شعور فراہم کیا جائے، کوئی بھی نظام اُس وقت تک نہیں کامیاب ہوسکتا جب تک اُس کی اہمیت سے لوگوں کو روشناس نہ کرایا جائے، صوبہ سندھ میں قوانین تو بنائے جاتے ہیں مگر ان پر مکمل طریقے سے عمل درآمد نہیں ہوتا جس کی اہم وجہ شعور کی بیداری ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ قوانین کے اطلاق اور اس پر عملدرآمد کے لئے ضروری ہے کہ لوگوں کو آگاہی فراہم کی جائے تاکہ وہ حکومت کا بٹائیں، درخت لگانا شاید آج میرے لئے اہم نہیں ہوگا لیکن یہ میری آنے والی نسلوں کے لئے ضروری ہے اور اگر آج ہم درخت لگائیں گے تواس سے میری اور آپ کی آنے والی نسلیں استفادہ کریں گی۔

مزید پڑھیں: سندھ حکومت کا پلاسٹک کی تھیلیوں پر پابندی کا اعلان

مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ درخت لگانے کے ساتھ ساتھ اس کی نگہداشت اور دیکھ بھال بھی بہت ضروری ہے ، صوبائی حکومت پورے سندھ کو سرسبزاور صاف ستھرا کرنے کی کوشش کررہی ہے جس کے لئے آپ سب کے تعاون کی ضرورت ہے، شجرکاری میں پیش آنے والی تمام ضروریات بشمول پودے بھی حکومت فراہم کرنے کو تیار ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ اب توصحراﺅں تک میں ہریالی ہونے لگی لیکن اگر ہم کراچی شہرکو دیکھتے ہیں توہمیں اس طرح کی ہریالی نظر نہیں آتی ، اگر ہم سب سندھ کو سرسبز وشاداب کرنے کے لئے اپنا کردار اداکریں گے تو دنیا کی کوئی طاقت کراچی کو سرسبزوشاداب ہونے سے نہیں روک سکتی۔

صوبائی مشیر ماحولیات کا کہنا تھا کہ ’’ہمارے سیوریج سسٹم کے مسائل کی سب سے بڑی وجہ پلاسٹک کی تھیلیاں ہیں یہ پلاسٹک کی تھیلیاں کوئی ادارہ نہیں بلکہ ہم اور آپ ڈال رہے ہیں لہذا حکومت نے ان پر مکمل پابندی لگانے کا فیصلہ کیا، اب صوبے میں پلاسٹک کی تھیلیوں کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔

انہوں نے اپیل کی کہ ’’ پلاسٹک سے نجات حاصل کرنے کے لیے سب کو اپنا کردار اداکرنا ہوگا اور اس حوالے سے لوگوں کو آگاہی فراہم کرنی ہوگی کہ اس کا استعمال ہم سب کی پریشانی کا سبب بن رہاہے۔ اُن کا کہنا تھا کہ جامعہ کراچی سندھ کی پہلی یونیورسٹی ہے جس نے سب سے پہلے سندھ حکومت کے اس فیصلے پر عملدرآمد کرتے ہوئے جامعہ کراچی میں پلاسٹک کی تھیلیوں پر پابندی کا نوٹیفیکشن جاری کیا جس پر میں جامعہ کراچی کی انتظامیہ کا بے حد مشکور ہوں۔

یہ بھی پڑھیں: اسپتالوں میں پلاسٹک کی تھیلیوں کااستعمال نہ کیاجائے، ڈی جی ہیلتھ سندھ

سیمینار کے اختتام پربیرسٹرمرتضیٰ وہاب نے شیخ الجامعہ پروفیسر ڈاکٹر خالد محمودعراقی،وائس چانسلر اقراءیونیورسٹی ڈاکٹر وسیم قاضی اور روئسائے کلیہ جات کے ہمراہ تین روزہ شجرکاری مہم کا افتتاح پودالگاکرکیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں