The news is by your side.

Advertisement

کراچی کے تاجروں نے کورونا ایس او پیز کو ہوا میں اڑا دیا

کراچی: شہر قائد کے تاجروں نے سندھ حکومت کی جانب سے جاری کردہ کورونا ایس او پیز کو ہوا میں اڑا دیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق کراچی کے تاجروں نے محکمہ داخلہ سندھ کی جانب سے جاری کردہ احکامات نظر انداز کردئیے، 6 بجے کے بعد بھی مارکیٹوں میں کاروبار جاری ہے۔

کراچی کا بڑا تجارتی مرکز حیدری اور اطراف کی دکانیں بدستور کھلی ہیں، برنس روڈ، جامع کلاتھ اور پاکستان چوک پر بھی دکانیں بند نہیں کی گئیں۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز کے مطابق مارکیٹوں اور دکانوں میں ماسک کا استعمال، سماجی فاصلے کو بھی نظر انداز کردیا گیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز محکمہ داخلہ سندھ نے 6 بجے مارکیٹیں بند کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا تھا، محکمہ داخلہ سندھ کا کہنا تھا کہ کاروبار صبح 6 بجے سے شام 6 بجے تک کیا جائے گا۔

مزید پڑھیں: سندھ میں انڈور شادی ہالز، جم، سنیما پر پابندی عائد، نوٹیفکیشن جاری

نوٹیفکیشن کے مطابق ریسٹورنٹ آؤٹ ڈور ڈیلیوری کرسکیں گے، ریسٹورنٹ کی ٹائمنگ رات 10 بجے تک ہوگی جبکہ کاروباری اوقات صبح 6 سے شام 6 بجے تک ہوں گے، تمام تجارتی مراکز جمعہ اور اتوار کو مکمل طور پر بند رہیں گے، جمعہ اور اتوار کو صرف روزمرہ کی ضروری اشیا کی دکانیں کھلیں گی۔

محکمہ داخلہ سندھ کا کہنا تھا کہ انڈور سنیما، تھیٹر، جم اسپورٹس اور مزارات بھی بند رہیں گے۔نوٹیفکیشن کے مطابق 50 فیصد سرکاری ملازمین گھروں سے کام کریں گے، سرکاری و نجی دفاتر میں ماسک پہننا لازمی ہوگا۔

محکمہ داخلہ سندھ کی جانب سے عائد کردہ پابندیاں 31 جنوری تک 2021 تک لاگو رہیں گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں