The news is by your side.

Advertisement

کشمیر تنازعہ بھارتی ہٹ دھرمی، وعدہ خلافی کی وجہ سے حل نہیں ہوسکا، صدر مملکت

اسلام آباد : یوم کشمیر پر جاری بیان میں صدر مملکت عارف علوی نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر پرانے تنازعات میں سے ایک ہے، جو بھارتی ہٹ دھرمی اور وعدہ خلافی کی وجہ سے حل نہیں ہوسکا۔

پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج یوم یکجہتی کشمیر منایا جارہا ہے، کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کےلیے صدر اور وزیر اعظم آج کشمیر کا دورہ کریں گے اور صدر مملکت کشمیر کی قانون ساز اسمبلی سے خطاب بھی کریں گے جبکہ وزیراعظم عمران خان آج کوٹلی میں اجتماع سے خطاب کریں گے۔

پاکستان اور آزاد کشمیر کو ملانے والے پلوں پر انسانی ہاتھوں کی زنجیر بنائیں جائے گی، اس موقع پر صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ کشمیریوں کو حق خودارادیت کےلیے جدوجہد پر بھرپور خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت نے پانچ اگست 2019 کو مقبوضہ کشمیر کی متنازعہ حیثیت کو تبدیل کیا اور آبادیاتی ڈھانچے کو تبدیل کرنے کےلیے غیر قانونی اقدامات کیے۔

ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا تھا کہ حق خودارادیت یو این چارٹر میں موجود بنیادی حق ہے، غیر قانونی طور پر محکوم کشمیریوں کے اس حق سے انکار انسانی وقار کی نفی ہے۔

صدر مملکت کا کہنا تھا کہ مسئلہ کشمیر سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر پرانے تنازعات میں سے ایک ہے، تنازعہ بھارتی ہٹ دھرمی اور وعدہ خلافی کی وجہ سے حل نہیں ہوسکا۔

ان کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں آبادیاتی امتیاز کے ذریعے اکثریت کو تبدیل کیا جارہا ہے، اور یہ اقدامات عالمی قوانین کی کھلی خلاف ورزی ہیں۔

صدرمملکت عارف علوی نے کہا کہ عالمی برادری بھارت کے سنگین جرائم پر اس کا محاسبہ کرے۔

انہوں نے مزید کہا تھا کہ کشمیری بھائی بہنوں کی مکمل حمایت اور یکجہتی کے عزم کا اعادہ کرتے ہیں، حق خودارادیت کے حصول تک کشمیریوں کی حمایت جاری رکھیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں