The news is by your side.

Advertisement

کینیا میں 10 بچوں کا خون پینے والا ’ڈریکولا‘ پکڑا گیا (ویڈیو)

نیروبی: کینیا میں رگوں سے خون چوس کر 10 بچوں کو قتل کرنے والے ’ویمپائر‘ کو گرفتار کر لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق کینیا میں پولیس نے ایک شخص کو گرفتار کیا ہے جسے ’خون کا پیاسا ویمپائر‘ کہا جاتا ہے، اور اس پر کم از کم دس بچوں کو بہت بھیانک طریقے سے قتل کرنے کا الزام ہے۔

اے ایف پی کے مطابق ملزم میسٹن ملیمو کی عمر 20 برس ہے، اسے بدھ کو 2 بچوں کو قتل کرنے پر گرفتار کیا گیا تھا، جن کی لاشیں نیروبی کے قریب جنگل سے برآمد ہوئیں، پولیس کا کہنا ہے کہ اس نے دس بچوں کو قتل کرنے کا اعتراف کر لیا ہے۔

بچوں کے لاپتا ہونے کے کیسز میں اضافے کے بعد اس ملزم کی گرفتاری کو پولیس نے ایک اہم پیش رفت قرار دیا، کرمنل انویسٹی گیشن ڈائریکٹوریٹ نے بدھ کو ایک ٹویٹ میں اس شخص کو ’خون کا پیاسا ویمپائر‘ لکھتے ہوئے کہا کہ اس نے اپنے شکار کو بہت بھیانک طریقے سے قتل اور بعض بچوں کو مارنے سے پہلے ان کی رگوں سے خون چوسا۔

پولیس کے مطابق ملزم نے پانچ سے 13 برس کے بچوں کو اپنا شکار بنایا، میسٹن ملیمو کی گرفتاری کی خبر کینیا کے بڑے اخبارات نے صفحہ اول پر شائع کی، پولیس کے مطابق ملزم نے سب سے پہلے ایک 12 سالہ لڑکی کو قتل کیا تھا جسے اس نے پانچ برس قبل اغوا کیا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کے ہاتھوں قتل ہونے والے متعدد بچوں کی لاشیں تاحال برآمد نہیں ہو سکی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں