site
stats
عالمی خبریں

خالصتان آزادی تحریک کے سربراہ ہرمندر سنگھ گرفتار

نئی دہلی: بھارتی پنجاب کی نابھا جیل سےفرار ہونے والےخالصتان لبریشن فورس کے سربراہ ہرمندر سنگھ کونئی دہلی سے گرفتار کرلیاگیا۔

تفصیلات کےمطابق گزشتہ روز بھارتی پنجاب کی نابھا جیل سےفرار ہونے والےخالصتان لبریشن فورس کے سربراہ ہرمندر سنگھ کوپنجاب اور نئی دہلی پولیس کے جوائنٹ آپریشن میں نئی دہلی ریلوے اسٹیشن سے آج گرفتار کیاگیا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز پولیس کی وردی میں ملبوس 10 مسلح افراد نے بھارتی پنجاب کے ضلع پٹیالہ میں نبھا جیل پر حملہ کر کے اندھا دھند فائرنگ کی جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے خالصتان لبریشن فورس کے سربراہ ہرمندر سنگھ منٹو 5 ساتھیوں سمیت جیل سے فرار ہو گئےتھے۔

بھارتی پولیس حکام نےاتوار کے روزہرمندر سنگھ منٹوکےجیل سے فرار ہونے کےبعدپنجاب کی سرحد ہریانہ اور جموں کشمیر جانے والے راستوں پر سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی تھی۔

خیال رہےکہ49 سالہ سربراہ ہرمندرسنگھ 2014 سے جیل میں تھے،ان کی گرفتاری کو بھارتی سرکار کی جانب سے دہشت گردی کے خلاف بھارتی پنجاب میں کیے جانے والے آپریشن کی سب سے بڑی فتح قرار دیا گیا تھا۔

مزید پڑھیں:خالصتان آزادی تحریک کے سربراہ ہرمندر سنگھ بھارتی جیل سے فرار

ہرمندر سنگھ 90 کی دہائی کے اوائل سے سکھ علیحدگی پسندوں کے ساتھ شامل تھے اور انہوں نے بھارتی حکومت کو اپنی کارروائیوں میں بھاری نقصان پہنچایا تھا۔

خالصتان لبریشن فورس کے سربراہ اور ان کےقریبی ساتھی گرپیت سنگھ عرف گوپی کو 2014 میں تھائی لینڈ میں پکڑا گیا تھا اور انہیں دہلی ایئرپورٹ سے بھارتی پولیس نے حراست میں لیا تھا۔

واضح رہے کہ خالصتان کی آزادی کی تحریک کے سربراہ کم از کم دہشت گردی کی 10 بڑی وارداتوں میں مطلوب تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top