ایسی تحریک چلانے کے موڈ میں نہیں جس سے نظام لپیٹا جائے،خورشید شاہ
The news is by your side.

Advertisement

ایسی تحریک چلانے کے موڈ میں نہیں جس سے نظام لپیٹا جائے،خورشید شاہ

اسلام آباد : پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ کا کہنا ہے ایسی تحریک چلانےکےموڈمیں نہیں جس سےنظام لپیٹاجائے، ایک شخص ایسی بات کررہا، جس سے نظام کو سپورٹ نہیں مل رہی۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ نے فواد چوہدری کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا پیپلزپارٹی کی کوشش ہےکہ سسٹم چلے، ایسی تحریک چلانےکےموڈمیں نہیں، جس سے نظام لپیٹا جائے۔

خورشیدشاہ کا کہنا تھا کہ ایک شخص ایسی بات کررہاجس سےنظام کوسپورٹ نہیں مل رہی، وہ شخص نظام کو ڈسٹرب کررہا ہے۔

پی پی رہنما نے کہا ایک صوبہ لپیٹ میں آیاتوسارانظام لپیٹ میں آتاہے، امیدہےحکومت غیرآئینی اقدام نہیں کرےگی،جس سے سسٹم کو لپیٹا جائے۔

انھوں نے مبینہ انتخابی دھاندلی پارلیمانی کمیٹی کاکل پہلااجلاس ہے، ٹی اوآرزبنیں گےتوہی کمیٹی چلےگی، ٹی او آرز نہ بنے تو نتیجہ کچھ بھی نہیں آئے گا۔

مزید پڑھیں : اپوزیشن کہتی ہے ہمارےخلاف کیسز نہ کھولے جائیں، فواد چوہدری

یاد رہے اپوزیشن کے حوالے سے وزیراطلاعات نے پریس کانفرنس میں کہا تھا جھگڑا ہماراصرف ایک بات پرہے،اپوزیشن کہتی ہے این آراو اور ہم کہتے ہیں نارو، اے پی سی ہورہی ہے لیکن ایجنڈے کا کچھ پتہ ہی نہیں، اپوزیشن نے کہا دھاندلی ہوئی ہم نے پوچھا تو کہتے ہیں معلوم نہیں کیسے ہوئی۔

فواد چوہدری نے مزید کہنا تھا کہ اپوزیشن کہتی ہے ہم ہار گئے اس لیے دھاندلی ہوئی ہے اور ہمارےخلاف کیسز نہ کھولے جائیں، پاکستان کا پیسہ لوٹا گیا اور ہم چاہتے ہیں یہ پیسہ ملک میں واپس آئے۔

وزیراطلاعات نے کہا تھا کہ پاکستان کو فخرہونا چاہیے،اسلامی دنیا کا اس پر اعتماد بحال ہوا، اسلامی دنیا عمران خان کو دیکھ رہی ہے، اسلامی دنیا کے مسائل کے حل میں ہمارا کردار ہونا چاہیے، یورپی یونین نے توہین آمیز مقابلے کو غلط قرار دیا یہ پاکستان کی کامیابی ہے، مذہب کے نام پر سیاست کرنے والوں کا سب کو پتہ ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں