site
stats
پاکستان

خورشید شاہ کا فیض آباد دھرنا ختم کرانے کیلئے حکومت کو فوج سے رابطے کا مشورہ

اسلام آباد : قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے فیض آباد دھرنا ختم کرانے کیلئے حکومت کو فوج سےرابطہ کرنے کی تجویزدے دی۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آبادمیں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈرخورشید شاہ نے حکومت کو فیض آباد دھرنا ختم کروانے کیلئے فوج سے رابطہ کرنےکی تجویز دے دی۔

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ فوج کو بلانا اوربات کرنا حکومت کا آئینی اختیار ہے، موجودہ صورتحال کے ذمہ دار نوازشریف ہیں۔

نااہل شخص کو پارٹی سربراہی سے روکنے کے بل کے حوالے سے اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ الیکشن ایکٹ ترمیمی بل منظور کرانے کی کوشش کرینگے، شاہ حکومت نے ٹال مٹول سےکام کیا تو دیگرآپشن موجود ہیں۔

انکا کہنا تھا کہ نااہل شخص پرپارٹی چلنے کےنتائج بہترنہیں آتے،حکمران برےہوسکتےہیں پارلیمنٹ نہیں۔

خورشید شاہ نے مزید کہا کہ عمران خان کا رویہ قوم دیکھ سکتی ہے۔

خیال رہے کہ اسلام آباد اور راولپنڈی کے سنگم فیض آباد میں دھرنے کا سولہواں روز ہے ، اسلام آباد ہائیکورٹ کے حکم کے باوجود حکومت دھرنے والوں کو نہ ہٹا سکی،  مذاکرات کےکئی دور ناکام ہوئے جبکہ علما و مشائخ کا اجلاس بھی بے نتیجہ رہا۔


مزید پڑھیں : اسلام آباد دھرنا: وزیر داخلہ کی عدالت سے مزید 2 دن کی مہلت طلب


دھرنے کے شرکاء وزیر قانون کےاستعفٰی سے کم پر تیارنہیں جبکہ حکومت کا مؤقف ہے کہ بنا ثبوت کے وزیر سے استعفٰی نہیں لے سکتے۔ 

گذشتہ روزاسلام آباد ہائیکورٹ نے وزرات داخلہ کوایک بارپھر دھرنا ختم کرانے کی ہدایت کی تھی، جس پر وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے عدالت سے اڑتالیس گھنٹے کا وقت لیاتھا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top