The news is by your side.

Advertisement

وفاداریاں اور ضمیر بیچنا ملک کے لیے اچھا شگون نہیں، خواجہ آصف

سیالکوٹ: سابق وزیر خارجہ اور مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف نے کہا ہے کہ وفاداریاں اور ضمیر بیچنا ملک کے لیے اچھا شگون نہیں ہے۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے سیالکوٹ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، ان کا کہنا تھا کہ سیاسی وابستگیوں کی تبدیلی ناممکنات میں ہونی چاہیے۔

خواجہ آصف نے کہا کہ 25 جولائی کو خلق خدا کی عدالت نے فیصلہ دینا ہے، یقین ہے کہ خلق خدا ووٹ کی حرمت اور عزت کی پاس داری کرے گی۔

انھوں نے ن لیگ کے عوامی نمائندوں کو نصیحت کرتے ہوئے کہا کہ وہ عوام کی امنگوں پر پورا اتریں اور عوام کے بنیادی اور قومی مسائل کو ایمان داری سے حل کریں، خیال رہے کہ یہ نصیحت گزشتہ ماہ ن لیگ کی پانچ سالہ حکومت پوری ہونے کے بعد آئی ہے۔

خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ سیاست دانوں کے باہمی اختلافات بھی ملک کے لیے نیک شگون نہیں، ان اختلافات کے باعث قومی مسائل پسِ پشت چلے گئے ہیں۔

اللہ نےمجھ عاجزاورگناہ گارپررحم اورکرم کیا ہے‘ خواجہ آصف


انھوں نے کہا کہ قومی مسائل حل کرنے کی بجائے ذاتی زندگیوں پر مباحثے ہو رہے ہیں، لیکن میں عوام کو درپیش مسائل کی طرف انتخابی مہم میں توجہ دلاؤں گا۔

سابق وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ ن لیگ، مشرف، پی پی، پی ٹی آئی کے گن گانے والے امیدوار بھی آئے، لیکن میں نے کبھی کسی کی ذاتی زندگی پر حملہ نہیں کیا۔

خواجہ آصف نے کہا میری سیاسی تربیت میں ذاتی زندگی پر گفتگو کرنا شامل نہیں، یقین ہے ان انتخابات میں نوازشریف کے امیدوار کام یاب ہوں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں