The news is by your side.

کیلاشی ثقافتی تہوار ’سوری جاگیک‘ عالمی ورثہ قرار

پشاور: اقوام متحدہ نے کیلاش قبیلے کی قدیم ثقافت ’ سوری جاگیک‘ کو عالمی ورثہ قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق ماریشیس میں اقوام متحدہ کی جانب سے 13ویں بین الاقوامی ثقافتی اجلاس کا انعقاد کیا گیا جس کے دوران یونیسکو نے کیلاش کی ثقافت کو محفوظ بنانے کا اعلان کیا۔

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے تحفظ و فروغ تعلیم،سائنس و ثقافت( یونیسکو) نے کیلاش قبیلے کی معدوم ہوتی ثقافت کو محفوظ بنانے والی فہرست شامل کیا جس کے بعد تہوار’سوری جاگیک‘ کو عالمی ورثہ قرار دے دیا گیا۔

مزید پڑھیں: کیلاش کا چھتر مس کا تہوار جہاں لڑکیوں نے کیا جیون ساتھی کا انتخاب

سوری جاگیک کیلاش قبیلے کے نزدیک چاند، سورج، ستاروں اور شہابِ ثاقب سےمتعلق قدیم ثقافت ہے۔

یونیسکو کی جانب سے سوری جاگیک کے علم اور تہوار عالمی فہرست میں شامل کرنے پر تحریک انصاف کے سینئر وزیر عاطف خان کا کہنا تھا کہ ’خیبرپختونخواہ حکومت ثقافت کو زندہ رکھنے کے لیے ہر ممکن اقدامات کرے گی‘۔ قبل ازیں عاطف خان نے گزشتہ ہفتے چترال اور کیلاش کی ترقی کے لیے 56 کروڑ روپے کے پیکج کا اعلان کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: کیلاش قبیلے کا سالانہ مذہبی تہوار پھول اختتام پذیر

پاکستان جنوبی ایشیاء کا واحد ملک ہے جس نے وادی کیلاش میں سورج، چاند اورستاروں کی مدد سے موسم کی پیشگوئی کی برسوں سے رائج قدیم مقامی روایت کو عالمی سطح پر اجاگرکیا۔ تیزی سے معدوم ہوتی روایت کے تحفظ کے لئے قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن نے کیس یونیسکو کو ارسال کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں