The news is by your side.

Advertisement

کویت کو 66 ارب ڈالر قرضہ درکار

کویت: کویتی وزارتِ خزانہ کا کہنا ہے کہ مملکت کو انفرا اسٹرکچر اور تعمیراتی منصوبوں کے لیے تیس برس میں 66 ارب ڈالر کا قرضہ درکار ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق کویتی وزیر خزانہ براک الشیتان نے کہا ہے کہ آئندہ 30 برس کے دوران ملک کو 66 ارب ڈالر کے قرضے کی اشد ضرورت ہوگی-

گزشتہ روز کویتی پارلیمنٹ میں مالیاتی و اقتصادی کمیٹی سے ملاقات کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کویتی وزیر خزانہ نے کہا قومی قرضہ مجموعی قومی پیداوار کا 60 فی صد سے زیادہ نہیں ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ قرضے کی رقم بنیادی ڈھانچے اور تعمیراتی منصوبوں پر خرچ کی جائے گی۔

کویتی وزیر خزانہ نے بتایا پارلیمانی مالیاتی کمیٹی نے تجویز دی ہے کہ قومی قرضے کی انتہائی حد اور اس کا دورانیہ کم کیا جائے، کویتی حکومت اس تجویز کا جائزہ لے کر جلد جواب دے گی، پارلیمنٹ سے قرضے کا قانون منظور کرانے کے لیے فریقین کے درمیان تعاون ضروری ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل کویتی وزیر خزانہ نے ارکان پارلیمنٹ کو خبردار کیا تھا کہ سرکاری خزانے میں صرف اکتوبر تک ملازمین کی تنخواہیں دینے کی گنجائش ہے۔

وہ یہ بھی کہہ چکے ہیں کہ تیل کے نرخوں میں کمی اور کرونا بحران وجہ سے قومی بجٹ کا خسارہ 14 ارب دینار تک پہنچ جائے گا، ان مسائل کی وجہ سے کویت بد ترین اقتصادی بحران سے گزر رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں