The news is by your side.

Advertisement

بڑھکیں مارنے والی مودی سرکارنے چین کے سامنے گھٹنے ٹیک دئیے

نئی دہلی : بڑھکیں مارنے والی مودی سرکارنے چین کے سامنے گھٹنے ٹیک دئیے اور مسائل حل کرنے کے لئے چین سے بات چیت کوتیار ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق لداخ میں بھارت کو مار پڑی تو  بھارتی وزیردفاع راج ناتھ سنگھ کو سانپ سونگھ گیا ، راج ناتھ سنگھ نے مارے گئے بھارتی فوجیوں پر تو بات کی لیکن چین کا نام اپنی زبان پر نہیں لائے۔

بھارتی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ چین سے مسائل بات چیت کےذریعے حل کرنے کے لئے تیار ہیں۔

دوسری جانب چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان لاؤ جیاں ژاؤ نے میڈیا بریفنگ میں کہا کہ لائن آف ایکچوئل کٹرول پرجوواقعہ ہوابالکل واضح ہے، جوکچھ ہوا چین کے علاقے میں ہوا، اس کی ذمہ داری چین پرعائد نہیں ہوتی۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ وادی گلوان ہمیشہ سے چین کا حصہ ہے۔بھارت سے سفارتی اورفوجی سطح پررابطے میں ہیں۔

یاد رہے لداخ کےعلاقے گلوان میں بھارتی سورماؤں نے چینی علاقے میں گھسنے کی کوشش کی، جس کے نتیجے میں کرنل سمیت بیس بھارتی فوجی ہلاک ہوگئے جبکہ تعدد بھارتی فوجی زخمی ہوئے جن میں چاربھارتی فوجیوں کی حالت تشویشناک ہے۔

چین کا کہنا تھا لداخ میں سرحدی صورتحال کا ذمہ داربھارت ہے، بھارتی فوجیوں نے حملہ کیا اورچینی علاقے میں گھسنے کی کوشش کی، بھارت اپنے فوجیوں کوبازرکھے اورایسا اقدام نہ کرے جس سے کشیدگی بڑھے۔

بعد ازاں بھارتی وزارت دفاع نے بھی اس واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا اب دونوں فوجیں اس مقام ہٹ گئی ہیں، اس واقعے کے بعد دونوں جانب کے فوجی حکام کشیدگی کو ختم کرنے کے لیے ایک بار پھر سے بات چیت میں مصروف ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں