The news is by your side.

Advertisement

لاہور، لڑکی مبینہ طور پرغیرقانونی اسقاط حمل کے دوران جاں بحق

لاہور: پنجاب کے شہر لاہور میں ایک اور لڑکی مبینہ طور پر غیر قانونی اسقاط حمل کے دوران زندگی کی بازی ہار گئی۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق لاہور کے علاقے یوحنا آباد کی رہائشی لڑکی رابعہ مسیح مبینہ طور پر غیرقانونی اسقاط حمل کے دوران جاں بحق ہوگئی، پڑوسی نوجوان موت واقع ہونے کے بعد حادثے کا ڈرامہ رچاتا رہا، پولیس نے قتل کا مقدمہ درج کرکے ملزم اعجاز مسیح کو حراست میں لے لیا۔

ذرائع کے مطابق يوحنا آباد کی رہائشی لڑکی سولہ فروری کو پڑوسی نوجوان کے ساتھ گئی تھی، اعجاز نے کچھ دير بعد ہی ورثا کو حادثے ميں ہلاکت کی اطلاع کردی۔

اہل خانہ لڑکی کی تدفين کرنے لگے تو جسم پر مشکوک نشانات پائے گئے، لڑکی کی ہلاکت پر قتل کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرکے پوليس نے اعجاز کو حراست ميں لے ليا۔

ورثا کا کہنا ہے کہ بیٹی کا رشتہ اعجاز کے ساتھ کرنا چاہتے تھے ليکن اس کے خاندان کو اس پر اختلاف تھا۔

ذرائع کے مطابق کرائم سين يونٹ اور ديگر تحقيقاتی ٹيموں نے لاش سے فنگر پرنٹس حاصل کرليے ہيں۔

پوليس نے شبہ ظاہر کيا ہے کہ لڑکی کی موت اسقاط حمل کی کوشش کے دوران ہوئی، پولیس کے مطابق مزيد حقائق سامنے لانے کے ليے جسمانی اعضا کے نمونے فرانزک ليبارٹری  بھجواديے گئے ہيں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں