The news is by your side.

Advertisement

لاہور ہائی کورٹ نے قرآن پاک کو تعلیمی نصاب میں شامل کرنے کا حکم دیدیا

لاہور : عدالت نے قرآن مجید کو لازمی تعلیمی تعلیم قرار دیتے ہوئے تعلیمی نصاب میں شامل کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ نے قرآن مجید کو لازمی تعلیم قرار دینے پر انٹرا کورٹ اپیل نمٹا دی، لاہور ہائی کورٹ نے حکام دیا کہ نجی اور سرکاری اسکولوں میں قرآن پاک کو بطور مضمون شامل کیا جائے۔

لاہور ہائی کورٹ نے قرآن پاک کو تعلیمی نصاب میں شامل کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ حکومت پنجاب اسلامی تعلیمات کے مطابق نصاب یقینی بنائے۔

سیکریٹری اسکولز کا کہنا تھا کہ آئندہ تعلیمی سال سے قرآن پاک کو بطور لازمی مضمون شامل کیا جائے گا، جس پر عدالت نے کہا کہ ہمیں حکومت کی جانب سے کوئی اہم پیش رفت نظر نہیں آرہی۔

سیکریٹری اسکول ایجوکیشن نے کہا کہ نیشنل کونسل تمام مذاہب کے امور پر سفارشات بنائے گی، عدالت نے کہا کہ پالیسی بنارہے ہیں تو اچھی بات ہے پھر آپ کا بیان ریکارڈ کرلیتے ہیں۔

لاہور ہائی کورٹ نے کہا کہ کتابوں میں توہین آمیز ریمارکس چھپ رہے ہیں ان پر کیا کررہے ہیں، جس پر سیکریٹری اسکولز نے بتایا کہ تمام مواد ہٹا دیا گیا ہے، آئندہ نصاب میں اس بات کو یقینی بنائیں گے۔

عدالت نے حکم دیا کہ تمام اسکولوں میں پڑجائی جانے والی کتابوں کی چیکنگ کو یقینی بنائیں، سیکریٹری اسکولز نے کہا کہ خلاف ورزی کرنے والے اسکولوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

عدالت نے حکم دیا کہ ایکٹ کے تحت قرآن پاک صرف مسلمان طلبا کو ہی پڑھایا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں