The news is by your side.

قتل کیس میں سزائے موت پانے والا ملزم 6 سال بعد بری

لاہور: صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور کی ہائیکورٹ نے قتل کیس میں سزائے موت پانے والے ملزم کو 6 سال بعد بری کردیا، عدالت نے ملزم کی اپیل پر فیصلہ دیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ نے قتل کیس میں سزائے موت پانے والے ملزم کو 6 سال بعد بری کردیا۔

ملزم کی اپیل پر سماعت جسٹس شہرام سرور کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نے کی۔

ملزم پر سنہ 2006 میں جائیداد کے تنازعے پر شہری کو قتل کرنے کا الزام تھا، ملزم کے خلاف تھانہ فیصل آباد پولیس نے قتل کا مقدمہ درج کیا۔

اپیل کی سماعت کرتے ہوئے ہائیکورٹ نے ملزم محمد عامر کو گواہوں کے بیانات میں تضاد کی بنیاد پر بری کیا۔

خیال رہے اس سے قبل سندھ ہائیکورٹ نے پولیس کے تشدد سے جاں بحق ہونے والے نوجوان کے ورثا کو 32 سال بعد انصاف فراہم کیا تھا۔

سنہ 1990 میں حراست میں لیے جانے والے نوجوان پر پولیس کی تحویل میں بدترین تشدد کیا گیا تھا، واقعے کی جوڈیشل انکوائری میں پولیس اہلکاروں کو ذمہ دار قرار دیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں