The news is by your side.

Advertisement

گریٹر اقبال پارک واقعے کے بعد لاہور میں جنسی ہراسگی کیسز میں 300 فی صد اضافہ

لاہور: ایک پولیس رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ لاہور میں‌ 14 اگست کے بعد سے جنسی ہراسگی کے کیسز کے اندراج میں 300 فی صد اضافہ ہو گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور پولیس نے شہر میں جنسی ہراسگی پر رپورٹ میں کہا ہے کہ گزشتہ ڈیڑھ ماہ میں شہر میں جنسی ہراسگی کے 642 مقدمات درج ہوئے، جب کہ چودہ اگست کے بعد مجموعی طور پر واقعات میں تین سو فی صد اضافہ ہوا ہے۔

پولیس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 14 اگست سے قبل مقدمات کی تعداد 150 سے کم تھی، جنسی ہراسگی کے اگست میں 323، اور رواں ماہ 319 مقدمات درج ہوئے۔

پولیس حکام کے مطابق مقدمات 354،354 اے، 509 بی کی دفعات کے تحت درج کیے جا رہے ہیں، مقدمات میں شامل یہ دفعات ناقابل ضمانت ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ 110 مقدمات جھوٹے ثابت ہونے پر خارج ہو چکے ہیں۔

ڈی آئی جی شارق جمال خان نے بتایا کہ جنسی ہراسگی کے واقعات پہلے بھی ہوتے تھے، تاہم خواتین مقدمات سے گریز کرتی تھیں، گریٹر اقبال پارک واقعے نے خواتین کے حوصلے بڑھائے۔

ڈی آئی جی شارق جمال خان نے تنبیہ کی کہ جنسی ہراسگی کے جھوٹے مقدمات درج کرانے والوں کے خلاف کارروائی ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں