The news is by your side.

Advertisement

طیاروں کو زمین سے لیزر لائٹ مارنے کے واقعات میں تشویشناک حد تک اضافہ

کراچی : طیاروں کو زمین سے لیزر لائٹیں مارنے کے واقعات میں تشویشناک حد تک اضافہ ہوگیا ہے، رواں سال طیاروں پر لیزر لائٹیں مارنے کے 58 سے زائد واقعات رپورٹ ہوئے ہیں، لیزر لائٹ پڑنے سے جہازوں کے تحفظات کو خطرات لاحق ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے ایک سال کے دوران لیزر لائٹ سے متعلق رپورٹ جاری کی گئی ہے، لیزر لائٹ سے متعلق رپورٹ اے آر وائی نیوز کو موصول ہوگئی۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اندرون و بیرون ملک سے آنے والی پروازیں لیزر لائٹ پڑنے سے متاثر ہوئیں، سب سے زیادہ سمندر کے قریب ریسٹورنٹس میں لگی بڑی بڑی لائٹوں سے پروازیں متاثر ہوتی ہیں۔

اس کے علاوہ اندرون ملک سے آنے والی پروازیں سب سے زیادہ متاثر ہوئیں، ماڈل کالونی، سہراب گوٹھ اور میمن گوٹھ سے واقعات رپورٹ ہوئے، طیاروں پر لیزر لائٹ پڑنے سے کپتانوں لینڈنگ کے وقت پریشانی کا سامنا رہتا ہے، کلفٹن اور ڈیفنس میں بنے ریسٹورنٹ میں لگی بڑی لائٹس جہازوں کو متاثر کررہی ہیں۔

ایئرپورٹ انتظامیہ کا کہنا ہے کہ سہراب گوٹھ اور ہائی وے پر بنے ریسٹورنٹ پر لگی بڑی لائٹس بھی جہازوں کیلئے مشکلات کاسبب بنی، لیزر لائٹس کے واقعات کے حوالے سے کمشنر کراچی اور پولیس انتظامیہ کو تحریری طور پر آگاہ کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق پولیس کی جانب سے ہائی وے اور سمندر کے سائٹ ریسٹورنٹ پر لگی لائٹس کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں